Saturday , October 21 2017
Home / عرب دنیا / سندھو آبی کمیشن پر دو روزہ ہند۔پاک مذاکرات کا آغاز

سندھو آبی کمیشن پر دو روزہ ہند۔پاک مذاکرات کا آغاز

نئی دہلی کے تین پراجکٹوں پر اسلام آباد کی تشویش ، خواجہ آصف کو مسئلہ کی خوشگوار یکسوئی کی اُمید

اسلام آباد ۔20 مارچ ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) ہندوستان اور پاکستان کے عہدیداروں نے سندھو آبی کمیشن کے دو روزہ اجلاس میں سندھو طاس سے متعلق مسائل پر تبادلہ خیال کیا ۔اُڑی حملہ کے بعد دونوں ملکوں کے باہمی تعلقات میں کشیدگی پیدا ہوجانے کے سبب دو سالہ وقفہ کے بعد یہ اجلاس منعقد ہوا ہے ۔ پاکستان کے وزیر پانی و بجلی خواجہ آصف نے کہاکہ ’’مذاکرات کا مارچ سے آغاز ہوا جو دونوں ملکوں کے تعلقات کیلئے بہتر ہیں‘‘۔ سندھو آبی کمشنر پی کے سکسینہ کی قیادت میں اس 10 رکنی وفد نے مرزا آصف سعید کی زیرقیادت پاکستانی وفد سے بند کمرہ بات چیت کی ۔ اجلاس کے دوران ان تین ہندوستانی پن بجلی پراجکٹوں پر پاکستان اپنی تشویش کا اظہار کریگا جو پاکستان کی سمت بہنے والی دریاؤں کے باندھ پر تعمیر کئے جارہے ہیں۔ ہندوستان پر ان تین پن بجلی پراجکٹوں میں 1000 میگاواٹ کا پگل ڈل چناب ، 120 میگاواٹ کا میار اور 43 میگاواٹ کا نشیبی کلنائی بھی شامل ہے۔ پاکستان کا استدلال ہے کہ ان پراجکٹوں سے 1960 ء کے سندھو آبی سمجھوتہ کی خلاف ورزی ہورہی ہے ۔ پکل ڈل اور نشیبی کلنائی پراجکٹس جموںو کشمیر میں 7,464 کروڑ روپئے ( نومبر 2008 کی قیمت کے مطابق ) اور 396 کروڑ روپئے کے مصارف سے تعمیر کئے جارہے ہیں ۔ میاء پن بجلی پراجکٹ ہماچل پردیش کے لاہول اسپینی ضلع میں ہے جو 1,125 کروڑ روپئے کی تخمینی لاگت سے تعمیر کیا جارہا ہے ۔ مستقل سندھو آبی کمیشن کیلئے آج کا اجلاس اس کا 114 واں سیشن تھا ۔ گزشتہ اجلاس 2015 ء میں منعقد ہوا تھا ۔ ستمبر 2016 ء میں ایک اجلاس کا منصوبہ بنایا گیا تھا جو پاکستان میں سرگرم تنظیموں کی جانب سے کئے گئے اُڑی دہشت گرد حملے کے بعد پیداشدہ کشیدگی کے سبب منسوخ کردیا گیا تھا ۔ خواجہ آصف نے کہاکہ سندھو آبی سمجھوتہ مختلف عالمی سمجھوتوں میں سے ایک ہے جو پاکستان اور ہندوستان کے درمیان پانی کے سنگین مسائل کی یکسوئی کیلئے دوستانہ حل فراہم کرتا ہے ۔ خواجہ آصف نے آج یہاں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا اکہ رئیل پن بجلی پلانٹ پر 12اپریل کو واشنگٹن میں دونوں ملکوں کے مابین بات چیت ہوگی ۔ خواجہ آصف نے اُمید ظاہر کی کہ پاکستان اور ہندوستان کے مستقل سندھو آبی کمشنرس کے مابین ملاقاتوں اور بات چیت کے نتیجہ میں معاملات صحیح سمت پیشرفت کریں گے ۔ ریڈیو پاکستان کے مطابق خواجہ آصف نے کہاکہ رواں اجلاس کے دوران سندھو طاس سے متعلق تمام دیرینہ مسائل پر تبادلہ خیال کیا جائیگا۔

TOPPOPULARRECENT