Tuesday , October 24 2017
Home / Top Stories / سنکرانتی کیلئے 50 لاکھ سے زائد افراد آبائی مقامات واپس

سنکرانتی کیلئے 50 لاکھ سے زائد افراد آبائی مقامات واپس

حیدرآباد ۔ وجئے واڑہ قومی شاہراہ پر ٹریفک جام ، بس ڈپوز اور ریلوے اسٹیشنوں پر عوام کا ہجوم ، خصوصی انتظامات
حیدرآباد۔ 12 جنوری (سیاست نیوز) تلسنکرانتی فیسٹیول کے آغاز کے ساتھ ہی شہر حیدرآباد میں مقیم لاکھوں افراد اپنے آبائی مقام واپس ہورہے ہیں۔ گزشتہ دو دن کے دوران زائد از 50 لاکھ افراد اپنے اپنے آبائی مقامات کو روانہ ہوئے ہیں جس کے نتیجہ میں بس ڈپوز اور ریلوے اسٹیشنوں پر زبردست ہجوم دیکھا گیا۔ اگرچیکہ جمعہ کو تہوار بھوگی سے فیسٹیول کے موسم کا آغاز ہورہا ہے۔ ہفتہ کو سنکرانتی ہے اور اتوار کو کنمو منایا جارہا ہے۔ تلنگانہ اور آندھرا پردیش کے مختلف حصوں سے اگر حیدرآباد میں مقیم افراد کی بڑی تعداد اپنے آبائی وطن کو روانہ ہورہی ہے۔ کئی افراد نے پیشگی ہی ٹرین اور بسوں میں اپنی نشستیں محفوظ کرالی مگر جن کو ٹکٹ نہیں ملا، انہوں نے متبادل طریقہ سے زائد رقم خرچ کرکے گھر واپسی کا انتظام کرلیا ہے۔ ساؤتھ سنٹرل ریلوے اور آر ٹی سی حکام نے عوام کے بڑھتے ہجوم کے پیش نظر زائد سرویس چلانے کا فیصلہ کیا ہے، تاہم یہ اضافی سرویس میں ناکامی ثابت ہورہی ہے، کیونکہ تہوار منانے اور مسلسل تعطیلات سے استفادہ کیلئے عوام کی بڑی تعداد اپنے وطن جانے کی خواہاں ہوتی ہے۔ کئی افراد اپنی ذاتی موٹر گاڑیوں اور خانگی ٹیکسیوں کے ذریعہ ہی وطن واپس ہورہے ہیں۔ آندھرا پردیش میں سنکرانتی تہوار کی کافی اہمیت کے پیش نظر شہر حیدرآباد میں مقیم آندھرائی عوام کی اکثریت اپنے آبائی مقامات کو روانہ ہونے کی وجہ سے حیدرآباد۔ وجئے واڑہ قومی شاہراہ پر گاڑیوں کی تعداد میں زبردست اضافہ ہوا ہے۔ گاڑیوں کی کثیر تعداد کی وجہ سے قومی شاہراہ پر پتنگی کے مقام پر واقع ٹول پلازا پر گاڑیوں کے رُک جانے کے نتیجہ میں ٹول پلازا سے زائد از دو کیلومیٹر کے فاصلے تک گاڑیاں رُک جانے کے پیش نظر حیدرآباد۔ وجئے واڑہ قومی شاہراہ پر کافی فاصلہ تک ٹریفک جام ہوگئی جس کی وجہ سے اس شاہراہ پر عوام کو کافی مشکلات سے دوچار ہونا پڑا۔ پتنگی کے مقام پر ٹول پلازا پر 16 کاؤنٹرس کے منجملہ 12 کاؤنٹرس حیدرآباد سے وجئے واڑہ میں جانے والی گاڑیوں کیلئے مختص کئے جانے کے باوجود زائد از دو کیلومیٹر فاصلے تک گاڑیاں رُک گئی ہیں اور طویل مسافت کا سفر کرنے والے بس مسافرین اور کاروں میں سفر کرنے والوں کو مشکلات سے دوچار ہونا پڑ رہا ہے۔ گاڑیوں کی کثیر تعداد کے باعث ٹریفک جام ہونے کے باعث حیدرآباد۔ وجئے واڑۃ قومی شاہراہ پر ٹریفک درہم برہم ہونے کا امکان ہے۔ اسی دوران بتایا جاتا ہے کہ آج رات گاڑیوں کی تعداد میں بڑے پیمانے پر اضافہ ہونے کا امکان ہے۔ آج تمام تعلیمی اداروں کو تعطیلات دیئے جانے اور جمعہ، ہفتہ اور اتوار تین دن مسلسل تعطیلات کی وجہ سے تمام سرکاری و خانگی ملازمین بھی اپنے آبائی مقامات کو روانہ ہونے کیلئے کوشاں ہیں جس کی وجہ سے ہر جگہ کثیر تعداد میں عوام ہیں۔ آر ٹی سی ذرائع کے مطابق سنکرانتی تہوار کے پیش نظر تلنگانہ اضلاع کیلئے 2,430 اور آندھرا پردیش کے مختلف مقامات کیلئے املی بن بس اسٹیشن سے 750 خصوصی بسیں چلائی جارہی ہیں۔ گزشتہ دن 650 خصوصی بسیں اضلاع کیلئے چلائی گئیں اور آج بروز جمعرات اس تعداد میں اضافہ ہوکر زائد از 900 بسوں کے چلانے کی اطلاعات ملی ہیں۔ عوام کی کثیر تعداد کے باعث مزید خصوصی بسوں کو چلانے کیلئے اقدامات کئے جارہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT