Sunday , August 20 2017
Home / اضلاع کی خبریں / سنگارینی اوپن کاسٹ کے خلاف عوامی تحریک

سنگارینی اوپن کاسٹ کے خلاف عوامی تحریک

منچریال /22 مارچ ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) منچریال کے اطراف سنگارینی کالریز انتظامیہ بتدریج کوئیلہ کی پیداوار کیلئے اوپن کاسٹ پراجکٹس کا آغاز کر رہی ہے ۔ سری راملپور کے علاوہ مختلف OCP گذشتہ عرصہ سے کوئیلہ کی پیداوار کا آغاز دور ہوچکا ہے اور اب کلیانی کھنی کے مقام پر میگا او سی پی کیلئے منصوبہ بندی ہو رہی ہے ۔ جس کی وجہ سے مشرقی عادل آباد ضلع برے بڑے گڑھوں میں تبدیل ہونے جارہا ہے ۔ ہر ایک فرد کی ذمہ داری ہے کہ وہ اس منصوبہ کے خلاف تحریک کا آغاز کریں ۔ یہ بات پروفیسر کودنڈا رام نے منچریال سے قریب 25 کیلومیٹر دور کاسی پیٹھ کے مقام پر منعقدہ مخالف کلیانی کھنی میگا او سی پی زبردست جلسہ عام سے مخاطب ہوتے ہوئے کہی ۔ انہوں نے کہا کہ اس او سی پی کی وجہ سے گاؤں کے گاؤں صفحہ ہستی سے مٹ جائیں گے ۔ زرعی اراضی ہرے بھرے کھیت کا نام و نشان ختم ہوجائے گا اور ہزاروں خاندانوں کو اپنے گھروں زراعت اور روزگار سے محروم ہوجانے کا خطرہ پیدا ہوگیا ہے ۔ اب وقت آگیا ہے کہ ہر ایک عوامی انجمنیں رضاکارانہ تنظیمیں سنگارینی کالریز انتظامیہ کے او سی پی منصوبہ کے خلاف احتجاج کریت ہوئے تحریک چلائیں تاکہ انتظامیہ کے اس تباہ کن منصوبہ کو روکا جاسکے ۔ ورنہ ہزاروں خاندان بے روزگار اور بے گھر ہوجائیں گے اور علاقہ کا ماحول اور طبعی و جغرافیائی عدم توازن بھی پیدا ہوجائے گا۔ انہوں نے افسوس ظہار کیا کہ عوامی نمائندے اس تباہ کن منصوبہ پر خاموش ہیں ۔ عوامی نمائندوں کو چاہئے کہ وہ متاثرہ دیہاتوں کے عوام کے ساتھ مل کر انتظامیہ پر دباؤ ڈالیں اس طرح یقیناً سنگارینی انتظامیہ او سی پی منصوبہ سے دستبردار ہوجائے گا اور مقامی کمیٹیوں و منڈل کمیٹیوں کو تشکیل دیتے ہوئے زبردست تحریک چلائی جائے گی ۔ انہوں نے سنگارینی انتظامیہ کو انتباہ دیا کہ وہ عوامی برہمی کے پیش نظر اپنیمنصوبہ سے باز آجائے بصورت دیگر عوامی طاقت کے ذریعہ ہر قسمت پر پراجکٹ کو روک دیا جائے گا ۔ اس جلسہ میں متاثرہ دیہاتوں کے ہزاروں افراد شرکت کرتے ہوئے کہا کہ وہ بھی مکمل طور پر عوامی تحریک چلائیں گے ۔

TOPPOPULARRECENT