Monday , September 25 2017
Home / شہر کی خبریں / سنہرے تلنگانہ کیلئے چیف منسٹر کی مساعی میں شامل : محمد فریدالدین

سنہرے تلنگانہ کیلئے چیف منسٹر کی مساعی میں شامل : محمد فریدالدین

نومنتخب ٹی آر ایس ایم ایل سی کا حلف برداری کے بعد میڈیا سے خطاب

حیدرآباد۔/20 اکٹوبر، ( سیاست نیوز) تلنگانہ قانون ساز کونسل کے نومنتخب رکن محمد فرید الدین نے آج رکنیت کا حلف لیا۔ قانون ساز کونسل کے احاطہ میں صدرنشین سوامی گوڑ نے انہیں حلف دلایا۔ محمد فرید الدین نے عہدہ کا اردو زبان میں حلف لیا۔ محمد فرید الدین قانون ساز کونسل کیلئے متفقہ طور پر منتخب قرار پائے ہیں۔ کھمم سے تعلق رکھنے والے وزیر عمارات و شوارع ٹی ناگیشورراؤ کے اسمبلی کے لئے انتخاب کے بعد کونسل کی رکنیت سے استعفی کے بعد ایک نشست پر ضمنی الیکشن کرایا گیا تھا۔ حلف برداری کے موقع پر ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی، ریاستی وزراء ٹی ہریش راؤ، این نرسمہا ریڈی، رکن پارلیمنٹ ظہیرآباد بی بی پاٹل، اراکین قانون ساز کونسل فاروق حسین، بھوپال ریڈی، راملو نائیک، نارا لکشمن داس، رکن اسمبلی بھوپال ریڈی، قانون ساز کونسل میں گورنمنٹ وھپس سدھاکر ریڈی، وینکٹیشورراؤ، ظہیرآباد کے مختلف عوامی نمائندوں کے علاوہ اقلیتی قائدین زین العابدین عابد، جاوید احمد، قادر شریف، سکندر معشوقی اور دوسرے موجود تھے۔ ظہیرآباد کی مجالس مقامی کے کئی موجودہ اور سابق عہدیداروں نے فرید الدین سے ملاقات کرتے ہوئے انہیں مبارکباد پیش کی۔ بعد میں میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے محمد فرید الدین نے قانون ساز کونسل کیلئے انتخاب پر چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ سے اظہار تشکر کیا۔ انہوں نے وزیر آبپاشی ہریش راؤ کے اہم رول پر بھی اظہار تشکر کیا۔ انہوں نے کہا کہ وہ رکن قانون ساز کونسل کی حیثیت سے سنہرے تلنگانہ کی تشکیل کیلئے چیف منسٹر کی مساعی میں خود کو شامل کریں گے۔ انہوں نے ظہیرآباد کی ہمہ جہتی ترقی اور عوامی فلاحی اسکیمات پر موثر عمل آوری کو یقینی بنانے کا تیقن دیا۔ فرید الدین نے کہا کہ وہ اپنے ایم ایل سی ترقیاتی فنڈ کے ذریعہ کمزور طبقات اور اقلیتوں کی معاشی ترقی سے متعلق پراجکٹس کے آغاز کی مساعی کریں گے۔ فرید الدین نے کہا کہ اقلیتوں کی ہمہ جہتی ترقی ان کی ترجیحات میں شامل رہیں گی۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر نے جن توقعات کے ساتھ قانون ساز کونسل کیلئے منتخب کیا ہے وہ ان پر کھرا اُترنے کی کوشش کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ اقلیتوں کی ترقی میں سنجیدہ ہیں اور حکومت نے نہ صرف بجٹ میں اضافہ کیا بلکہ کئی منفرد اسکیمات کا آغاز کیا ہے۔ اقلیتی بجٹ کے موثر خرچ اور اسکیمات کے فوائد حقیقی مستحقین تک پہنچانے میں وہ حتی المقدور مساعی کریں گے۔ واضح رہے کہ محمد فرید الدین کے قانون ساز کونسل کیلئے انتخاب کے بعد ٹی آر ایس کے اقلیتی ارکان کونسل کی تعداد بڑھ کر 4 ہوچکی ہے۔ ان میں صرف 2 ارکان ٹی آر ایس کے ٹکٹ پر منتخب ہوئے ہیں جن میں محمود علی اور فرید الدین شامل ہیں جبکہ دیگر 2 ارکان فاروق حسین اور محمد سلیم علی الترتیب کانگریس اور تلگودیشم سے ٹی آر ایس میں شامل ہوئے ہیں۔ قانون ساز اسمبلی میں ٹی آر ایس کے واحد رکن اسمبلی عامر شکیل ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ چیف منسٹر دیپاولی کے موقع پر کابینہ میں توسیع کا منصوبہ رکھتے ہیں اور توسیع میں ایک اور مسلم وزیر کی شمولیت کی قیاس آرائیاں کی جارہی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT