Sunday , August 20 2017
Home / اضلاع کی خبریں / سنہرے تلنگانہ کی تشکیل ٹی آر ایس حکومت کا نصب العین

سنہرے تلنگانہ کی تشکیل ٹی آر ایس حکومت کا نصب العین

آرمور میں ریونیو ڈیویژن کا افتتاح، ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی کی مخاطبت
آرمور۔/25مئی، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) نائب وزیر اعلیٰ تلنگانہ محمود علی، ریاستی وزیر زراعت پوچارام سرینواس ریڈی، رکن پارلیمنٹ کے کویتا، مشن بھگیرتا نائب چیرمین ٹھیک 11:30 بجے آرمور پہنچے۔ یہ تمام رکن اسمبلی آرمور کے ہمراہ آرمور میونسپل سی سی روڈس و دیگر ترقیاتی کاموں کا سنگ بنیاد رکھے، پھر آرمور شاستری نگر میں واقع ریونیو ڈیویژن کا افتتاح انجام دیا۔ اس موقع پر حلقہ اسمبلی آرمور کی عوام سے مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے آرمور کو ریونیو ڈیویژن بنانے کا اعلان کیا تھا اس وعدہ کو وفا کرتے ہوئے اس کے دفتر کا بھی افتتاح عمل میں لایا گیا۔ وزیر اعلیٰ کے سی آر ایک بہترین محنتی شخصیت کا نام ہے جن کی قربانیوں کے سبب ہمارا تلنگانہ کا خواب پورا ہوا، وہ روزانہ تقریباً 14گھنٹے کام کرتے ہیں اور سنہرا تلنگانہ بنانے میں مصروف ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ متحدہ ریاست میں آندھرائی قائدین نے تلنگانہ کو ترقیاتی کاموں میں پیچھے کردیا تھا اور وہ 58سال تک یہاں راج کرتے رہے۔ انہوں نے کہا کہ آج کے سی آر کے دور حکومت میں 24گھنٹے برقی دی جارہی ہے اور کسانوں کو بھی صحیح طور پر برقی کے علاوہ تلنگانہ کو سیراب کرنے کیلئے پراجکٹس کی ترقی مشن کاکتیہ کے ذریعہ پانی کے مسائل کو دور کرنے کی کوشش کی جارہی ہے اور مشن بھگیرتا کے تحت ریاست کے تمام مکانات تک پانی پہنچانے کا کام شروع کردیا گیا ہے اور انہوں نے ریونیو کو بہترین محکمہ قرار دیا، جس کے تحت اقلیتوں کو پہنچائی جانے والی شادی مبارک کے علاوہ کلیان لکشمی اور دیگر سروے وغیرہ ریونیو محکمہ کے تحت ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ نے تلنگانہ ریاست کے 14اضلاع بڑھانے کا نشانہ لیا ہے جس کے تحت ترقیاتی کاموں میں اضافہ ہوگا۔ رکن پارلیمنٹ کے کویتا نے مخاطب کرتے ہوئے تمام کو ریونیو ڈیویژن کی مبارکباد دی اور بتایا کہ یہ عوام کا 30سالہ خواب پورا ہوا ہے۔ حالانکہ سابقہ حکومتوں میں کئی بڑے قائدین نے آرمور کو ریونیو ڈیویژن بنانے کا وعدہ کرنے کے بعد پورا نہیں کیا۔ اس موقع پر ریاستی وزیر زراعت پوچارام سرینواس ریڈی نے بھی مخاطب کیا اور حکومت کی اسکیمات آسرا پنشن،

 

شادی مبارک، کلیان لکشمی کو کامیاب اسکیمات قرار دیا اور یہ اسکیمات ہندوستان میں کسی ریاست میں نہ ملنے کا ذکر کیا۔ اس کے علاوہ مشن بھگیرتا نائب چیرمین پرشانت ریڈی نے بھی مخاطب کیا۔ اس کے علاوہ مقامی رکن اسمبلی آرمور جیون ریڈی نے تمام کو ریونیو ڈیویژن کی مبارکباد دیتے ہوئے نائب وزیر اعلیٰ محمود علی جو ریونیو منسٹر بھی ہیں ان کا شکریہ ادا کیا کیونکہ وہ اپنے وعدہ کو پورا کرتے ہوئے آرمور کوریونیو ڈیویژن کا درجہ دیا گیا۔ انہوں نے بتایا کہ کے سی آر کی حکومت ترقیاتی کاموں میں کوئی کسر باقی نہیں رکھ رہی ہے۔ آرمور A سے شروع ہوتا ہے اس طرح اردو میں الف سے اس طرح کے سی آر نے انتخابات میں سب سے پہلے آرمور حلقہ سے مجھے امیدوار بناتے ہوئے پہلے نام کا اعلان کیا تھا، بتایا کہ یہاں پر 26کیلو میٹر کی سڑک کی ترقی کیلئے 117کروڑ روپئے، گتپہ لیفٹ ایریگیشن کیلئے 27کروڑ روپئے کا حال ہی میں اعلان کیا گیا۔ مسلم مائناریٹیز کے مختلف تنظیموں کے ذمہ داروں کو اطلاع دی گئی تھی اور انہیں آنے کی دعوت دی گئی تھی کیونکہ یہاں میناریٹیزکیلئے کیلئے کوئی ترقیاتی کام انجام نہیں دیئے گئے اور نہ انہیں اہمیت دی جارہی ہے جس کی وجہ سے مسلم تنظیموں کے ذمہ داروں نے پروگرام میں شرکت کرنا گوارا نہیں کیا۔ اس موقع پر نائب وزیر اعلیٰ، ایم پی کویتا، ریاستی وزراء پوچارام سرینواس ریڈی، پرشانت ریڈی، جیون ریڈی کے علاوہ ضلع کلکٹر یوگیتا رانا، نائب کلکٹر رویندر ریڈی، آر ڈی او یادی ریڈی، ضلع کے مختلف عہدیداروں کے علاوہ میونسپل چیرمین سواتی سنگھ ببلو، نائب چیرمین لنگا گوڑ، میونسپل کوآپشن ممبر ملک بابا، محمد عبدالعظیم، کونسلر عبدالرحمن و دیگر موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT