Monday , September 25 2017
Home / ہندوستان / سوامی آسیمانند کی ضمانت کو چیلنج نہیں کیا جائے گا

سوامی آسیمانند کی ضمانت کو چیلنج نہیں کیا جائے گا

قانونی ماہرین کی رائے پر این آئی اے کا فیصلہ، مرکزی وزیر کا دعویٰ
نئی دہلی ۔ 23 ۔ ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) قومی تحقیقاتی ادارہ (این آئی اے) نے یہ فیصلہ کیا کہ سمجھوتہ اکسپریس دھماکہ کیس کے اصل ملزم سوامی اسیما نند کی درخواست ضمانت کی منظوری کو عدالت میں چیلنج نہ کیا جائے۔ پنجاب اور ہریانہ ہائیکورٹ نے 28 اگست 2014 ء کو بعض شرائط کے تابع بنا کمار سرکاری عرف سوامی اسیمانند کی درخواست ضمانت کی منطوری کے احکامات جاری کئے تھے۔ پنجاب اور ہریانہ ہائیکورٹ نے یکم مئی 2015 ء کو تحریری احکامات این آئی اے کو 5 مئی 2015 ء کے دن وصول ہوئے تھے جس پر تحقیقاتی ادارہ نے ا پنے قانونی شعبہ کے ساتھ مشاورت کر کے جائزہ لیا تھا ۔ مملکتی وزیر داخلہ ہری بھائی پرتی بھائی چودھری نے آج لوک سبھا میں یہ اطلاع دی۔

ایک سوال کا تحریری جواب دیتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ پنجاب اور ہریانہ ہائیکورٹ کی جانب سے 28 اگست 2014ء کو جاری کردہ احکامات کے خلاف سپریم کورٹ میں ایس ایل پی (خصوصی مرافعہ) داخل نہ کرنے کا این آئی اے فیصلہ کیا ہے کیونکہ ماہرین کی یہ رائے ہے کہ عدالت میں چیلنج کرنے کیلئے کوئی قانونی بنیاد نہیں ہے ۔ تاہم ملزم بنا کمار سرکاری بدستور جیل میں مقید ہے کیونکہ وہ اجمیر دھماکہ کیس میں بھی ملزم ہے جس میں اسے  ضمانت منظور نہیں ہوئی ہے ۔ علاوہ ازیں ملزم نے پنجاب اینڈ ہریانہ ہائیکوٹ کے توضیح کردہ شرائط کی تعمیل بھی نہیں کی جس کے باعث وہ سمجھوتہ اکسپریس دھماکہ کیس میں ہنوز عدالتی تحویل میں ہے ۔ واضح رہے کہ پانی پت کے قریب 18 فروری 2007 ء کو دہلی۔لاہور سمجھوتہ اکسپریس میں 2 بم دھماکے پیش آئے تھے جس میں 68 مسافرین ہلاک اور دیگر 12 زخمی ہوگئے تھے ۔ ابتداء میں ہریانہ پو لیس نے تحقیقات کر کے 26 جولائی 2010 ء کو نیشنل انویسٹگیشن ایجنسی (این آئی اے) کے حوالے کردیا تھا اور این آئی اے نے بعد تحقیقات 8 ملزمین کے خلاف چارج شیٹ داخل کیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT