Monday , August 21 2017
Home / شہر کی خبریں / سوامی اسیمانند کی ضمانت پر این آئی اے کے عدم اعتراض پر اظہار تشویش

سوامی اسیمانند کی ضمانت پر این آئی اے کے عدم اعتراض پر اظہار تشویش

این ڈی اے حکومت پر ہندودہشت گردوں کے ساتھ نرم رویہ اختیار کرنے کا الزام: محمد خواجہ فخر الدین
حیدرآباد /12 اگست (سیاست نیوز) صدر تلنگانہ پردیش کانگریس اقلیت ڈپارٹمنٹ محمد خواجہ فخر الدین نے ہندو دہشت گردی کا پردہ فاش کرنے اور مکہ مسجد کے علاوہ دیگر بم دھماکوں کا جرم قبول کرنے والے سوامی اسیمانند کی ضمانت کے لئے این آئی اے کی جانب سے عدالت میں اعتراض نہ کرنے کے فیصلہ پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ این ڈی اے حکومت ہندو دہشت گردی میں ملوث افراد کے ساتھ نرمی سے پیش آرہی ہے اور تحقیقاتی ایجنسیوں پر دباؤ ڈال رہی ہے، جس کی کانگریس پارٹی سخت مذمت کرتی ہے۔ انھوں نے کہا کہ دہشت گردی صرف دہشت گردی ہے، لہذا اس میں ملوث ہندو یا مسلم کے ساتھ مساویانہ کارروائی ہونی چاہئے، جب کہ کانگریس زیر قیادت یو پی اے حکومت نے اس معاملے میں کوئی امتیاز نہیں برتا۔ انھوں نے کہا کہ اس وقت کے مرکزی وزیر داخلہ چدمبرم نے پارلیمنٹ میں ہندو دہشت گردی کا اعتراف کیا تھا اور ان کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے انھیں گرفتار کیا گیا اور ان کے خلاف مقدمات قائم کئے گئے۔ انھوں نے کہا کہ این ڈی اے حکومت میں مسلمانوں کو نہ صرف ہراساں و پریشان کیا جا رہا ہے،

 

بلکہ حق اور ناانصافی کے خلاف آواز بلند کرنے والے مسلمانوں کو پاکستان چلے جانے کا مشورہ دیا جا رہا ہے۔ انھوں نے کہا کہ سوامی اسیمانند نے 18 دسمبر 2011ء کو تیس ہزاری کورٹ دہلی میں مجسٹریٹ کے روبرو سی آر پی سی 164 کے تحت بیان دیتے ہوئے مکہ مسجد، مالیگاؤں، اجمیر شریف اور سمجھوتہ ایکسپریس بم دھماکوں کا اعتراف کرتے ہوئے ہندو دہشت گردی کا پردہ فاش کیا تھا، تاہم ایسے مجرم کے خلاف سخت کارروائی کرتے ہوئے پھانسی کی سزا دینے کی بجائے مرکزی حکومت اس کے خلاف نرم رویہ اختیار کر رہی ہے۔ انھوں نے کہا کہ قومی تحقیقاتی محکمہ (این آئی اے) نے سوامی اسیمانند کی مشروط ضمانت کے لئے داخل کی جانے والی درخواست کی مخالفت نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے، جس سے یہ محسوس ہو رہا ہے کہ نرم رویہ اپنانے کے لئے تحقیقاتی ایجنسی پر مرکزی حکومت دباؤ ڈال رہی ہے۔ انھوں نے بتایا کہ مالیگاؤں بم دھماکہ مقدمہ کے خصوصی وکیل استغاثہ روہنی سالیان نے بھی این آئی اے کی جانب سے ملزمین سادھوی پرگیہ سنگھ ٹھاکر اور کرنل پروہت کے ساتھ نرمی برتنے کا الزام عائد کیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT