Monday , March 27 2017
Home / شہر کی خبریں / سود خوروں کی ہراسانی میں اضافہ، سود کی دوگنی رقم وصولی

سود خوروں کی ہراسانی میں اضافہ، سود کی دوگنی رقم وصولی

مقروض افراد خوف کا شکار، پولیس خاموش تماشائی
حیدرآباد۔5مارچ (سیاست نیوز) شہر میں سود خوروں کی ہراسانی کی شکایات میں بتدریج اضافہ ہونے لگا ہے اور چھوٹے تاجرین کا کہنا ہے کہ کرنسی تنسیخ کے بعد جو صورتحال پیدا ہوئی تھی اس کے سبب وہ سود خوروں کو سود کی ادائیگی میں ہوئی پریشانیوں کے سبب وہ ہراساں کرتے ہوئے دوگنی سے زیادہ رقومات کی ادائیگی کیلئے دباؤ ڈال رہے ہیں۔ پرانے شہر میں سود خوروں کی ہراسانی کوئی نئی بات نہیں ہے لیکن سال گذشتہ ساؤتھ زون پولیس کی جانب سے کی گئی کاروائیوں کے بعد صورتحال میں کچھ حد تک تبدیلی رونما ہوئی تھی لیکن اب دوبارہ وہی صورتحال پیدا ہوتی جا رہی ہے اور سودی کاروبار میں ملوث افراد اپنے رسوخات کے ذریعہ قرضدہندگان کو خوفزدہ کر رہے ہیں اور انہیں یہ تاثر دیا جا رہا ہے کہ پولیس میں شکایت پر بھی ان کے خلاف کوئی کاروائی نہیں کی جا سکتی اسی لئے ان کی جانب سے مطلوبہ رقم کی ادائیگی کے علاوہ کوئی چارہ نہیں ہے۔ حیدرآباد میں سودی لین دین میں ملوث افراد جنہیں قرض فراہم کرتے ہیں ان کی دستخط سادہ کاغذ پر حاصل کرنے کے علاوہ ان سے چیکس حاصل کرلیتے ہیں جن کے ذریعہ انہیں بلیک میل کیا جاتا ہے ۔ محکمہ پولیس کے اعلی عہدیداروں کے علاوہ پولیس اسٹیشن کی سطح پر موجود ان سودخوروں کی سرگرمیوں سے پولیس واقف ہونے کے باوجود خاموش تماشائی بنے رہنے کے سبب ان افراد کو اپنے غیر قانونی کاروبار میں من مانی کا موقع میسر آرہا ہے۔ سود خوروں سے پرانے شہر کے عوام کو نجات دلانے کیلئے ضروری ہے کہ پولیس کی جانب سے سخت حکمت عملی اختیار کرتے ہوئے ان تمام افراد کے خلاف کاروائی کی جائے جو سودخوروں کی پشت پناہی کرتے ہوئے انہیں بچانے کیلئے آگے آتے ہیں۔ پولیس ذرائع کے مطابق بیشتر سودی کاروبار کرنے والے افراد خود کو سیاسی جماعتوں سے وابستہ کرتے ہوئے لوگوں میں خوف پھیلا رہے ہیں اور انہیں بسا اوقات سیاسی پشت پناہی بھی مل جاتی ہے جس کے سبب ان کے خلاف کاروائی میں دشواریاں ہوتی ہیں لیکن اگر کوئی متاثرہ شخص کسی سودخور کے خلاف شکایت کے ساتھ رجوع ہوتا ہے تو اس کے خلاف کاروائی میں پولیس کوکوئی ہچکچاہٹ نہیں ہوتی لیکن ان سودخوروں کے خلاف متاثرین پولیس سے رجوع ہونے میں خوف محسوس کرتے ہیں۔پرانے شہر میں غریب عوام کے درمیان خدمات انجام دینے والی غیر سرکاری تنظیم کے ذمہ داروں کا کہنا ہے کہ پولیس کو عوام میں اعتماد پیدا کرنا چاہئے کہ وہ بلاخوف و خطر اس طرح کے سود خوروں کے خلاف پولیس میں شکایت درج کروانے کے لئے آگے آئیں جو بھاری سود پر غیر قانونی کاروبار میں ملوث ہیں اور عدم ادائیگی کی صورت میں ہراسانی کا شکار بنا رہے ہیں۔ چھوٹے تاجرین جو روزمرہ کے کاروبار کرتے ہوئے گھر چلاتے ہیں نے ڈپٹی کمشنر آف پولیس ساؤتھ زون سے اپیل کی کہ وہ سود خوروں کے خلاف شکایات کی وصولی کیلئے خصوصی کیمپ کا اعلان کریں تاکہ متاثرین راست ان سے رجوع ہوتے ہوئے اپنی شکایات سے واقف کروا سکیں۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT