Wednesday , September 20 2017
Home / شہر کی خبریں / سٹ ون سے ضامن روزگار کورسیس کی تربیت قابل ستائش

سٹ ون سے ضامن روزگار کورسیس کی تربیت قابل ستائش

سرمایہ کاری پر ورکشاپ ، جناب اے کے خاں اور عنایت علی باقری کا خطاب
حیدرآباد۔17اگست(سیاست نیوز) سٹ ون کے زیر اہتمام پرائیوٹ ‘ پبلک ‘ پارٹنر شپ( پی پی پی) کے تحت ایک ورک شاپ آج یہاں سنٹرل کورٹ ہوٹل ‘ لکڑی کا پل میںمنعقد ہوا ۔مشیر حکومت تلنگانہ برائے اقلیتی امور جناب اے کے خان کے علاوہ چیرمن سٹ ون میرعنایت علی باقری‘ ایم ڈی ودیاناتھ رائو‘ محمد مسیح اللہ کے علاوہ دیگر نے بھی اس ورک شاپ سے خطاب کیا۔ جناب اے کے خان نے خطاب کرتے ہوئے سٹ ون کی کارکردگی کو قابل ستائش قراردیا او رکہاکہ سٹ ون کی ذمہ داریوں سے واقف افراد کی ادارے میںموجودگی کارگر ثابت ہورہی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ سٹ ون میں تغذیہ بخش بسکٹ‘ ایل ای ڈی لائٹس‘ سولار پائور پراجکٹس‘ موٹر ڈرائیوینگ ٹریننگ‘ رنگے برنگے نگینوں کو تراشنے کی تربیت‘ سٹ ون واش کا قیام ‘ ای رکشہ کی تنصیب‘ نوٹس بکس او رتعلیم سے جڑی دیگر اسٹیشنر ی کی تیاری کے متعلق تربیت او رانڈسٹری کا قیام کے منصوبوں کو حوصلہ بخش قراردیا۔ جناب اے کے خان نے کہاکہ یقینی طور پر سٹ ون کے بہت سارے پراجکٹس سے حکومت تلنگانہ استفادہ کرسکتی ہے بشرطیکہ مقرر وقت میں کام کی تکمیل اور سامان کی سربراہی کو پورا کرنا ہوگا۔ انہوں نے کہاکہ تلنگانہ میناریٹی اقامتی تعلیمی ادارہ جات سوسائٹی کے تحت204اقامتی اسکولس قائم کئے گئے جہاں پر سٹ ون کے معلنہ پراجکٹس سے ہونے والے پروڈکشن کی ضرورت پڑیگی۔ انہو ں نے کہاکہ ہمارے اقامتی اسکولس میںاین ٹی سی اے پی بچوں کو جوتے سپلائی کرتا ہے وہیں پر اے پی سی او یونیفارم کی فراہمی عمل میںلاتی ہے۔ محکمہ اقلیتی مالیتی کارپوریشن میں ایک سو پچاس کروڑ کا بجٹ ہے جس میںسے پچیس کروڑ کی رقم آٹوز کے لئے مختص کی گئی ہے اور اگر سٹ ون ای رکشہ کو فروغ دیتا ہے تو یقینی طور پر اقلیتی مالیتی کارپوریشن کے ذریعہ بھی سٹ ون کو مراعات کی پیش کش کے متعلق تجاویز تیار کئے جاسکتے ہیں۔ سب سے پہلے سٹ ون میں بیرونی سرمایہ کاری کے حالات کویقینی بنانے اور سرمایہ کاروں کے منافع کے متعلق واقف کروانے او ران میںشعور بیداری عمل میںلانے کی ضرورت ہے۔ عنایت علی باقری نے ورک شاپ سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ عمومی طور پربیرونی ممالک میںرہنے والے لوگ سرمایہ کاری میں دلچسپی رکھتے ہیں مگر کونسلنگ کی کمی اور درمیانی لوگوں کے جھانسے میں آکر انہیںنقصانات کا سامنا بھی کرنا پڑتا ہے ۔ انہوں نے مزید کہاان تمام حالات کو پیش نظر رکھتے ہوئے سٹ ون نے پی پی پی کے تحت سرمایہ کاری کی شروعات عمل میںلانے کا فیصلہ کیا ہے۔ حکومت کی نگرانی میںسرمایہ کاری سے کسی کو بھی نقصان کا سامنا نہیں کرنا پڑیگا۔ باقری نے بتایا کہ سرمایہ کاری پر حکومت کی جانب سے رعایت ملے گی اور سرمایہ کاری کے تین سال تک کاروبار کی نگرانی کریگا ۔ انہو ںنے کہاکہ اس کے بعد اگر سرمایہ کار چاہیں تو سٹ ون سے ہٹ کر بھی اپنی تجارت کو جاری رکھ سکتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ سٹ ون میںبہت جلد بڑے پیمانے پر مختلف امور کے یونٹس کا قیام عمل میںلایاجارہا ہے جسکا تذکرہ جناب اے کے خان نے کیا ہے اور کہاکہ ان پراجکٹس کی تربیت کے بعد سٹ ون تربیت یافتہ افراد کی خدمات سے استفادہ کرتے ہوئے انڈسٹری قائم کرنے کاکام بھی کریگا۔ انہو ںنے کہاکہ سرمایہ کاری کے متعلق سٹ ون کے تحت کونسلنگ سنٹرس بھی قائم کرنے کی تیاری کی جارہی ہے ۔ ایم ٹی سٹ ون ویاناتھ رائو نے تمام مہمانوں کا خیر مقدم کیا۔

TOPPOPULARRECENT