Thursday , September 21 2017
Home / اضلاع کی خبریں / سڑک حادثہ مقدمہ کی تحقیقات پر قتل کا انکشاف

سڑک حادثہ مقدمہ کی تحقیقات پر قتل کا انکشاف

نظام آباد میں دو ملزمین گرفتار، ڈی ایس پی آنند کمار کا بیان

نظام آباد:8؍ جون ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)قتل کی واردات میں ملوث دو افراد کو گرفتار کیا گیا ، ڈی ایس پی نظام آباد مسٹر آنند کمار نے یہ بات بتائی۔ انہوں نے بتایا کہ 22؍ مئی کے روز ماکلور پولیس اسٹیشن کے حدود میں سڑک حادثہ میں ایک شخص ہلاک ہونے کی وی آر او مامڑ ی پلی کی درخواست پر پولیس ماکلورنے ایک مقدمہ درج کرتے ہوئے تحقیقات کا آغاز کیا تھااور ڈی ایس پی آنند کمار کی نگرانی میں سرکل انسپکٹر نظام آباد رورل اور سب انسپکٹر ماکلور نے تحقیق کرنے پر پتہ چلا کہ آرمور منڈل کے مامڑی پلی سے تعلق رکھنے والے ایم دیپک ریڈی اور بالکنڈہ منڈل کے کتہ پلی سے تعلق رکھنے والے راجکمار کی گذشتہ پانچ سال سے دوستی ہے ۔ جی راجکمار نامی شخص کی ایک شادی کی تقریب میں دیپک ریڈی سے جھگڑا ہوا تھا اور اس وقت ساتھیوں نے صلح کروایا تھا۔ 21؍ مئی کے روز آرمور کے ایک شراب کی دکان میں شراب نوشی کے دوران راجکمار نے دیپک ریڈی کے ساتھ دوبارہ جھگڑاہوا تھا ساتھیوں نے صلح کرانے پر مزید شراب نوشی کیلئے راجکمار کو دیپک ریڈی نے راضی کراتے ہوئے ذریعہ کار روی کمار کے ساتھ انکا پور موضع کے حدود میں شراب نوشی کی اور شراب نوشی کے دوران جھگڑا ہوااور برہمی کے عالم میں دیپک ریڈی نے راجکمار کو ہاتھ اور پیر سے مار پیٹ کی اورسر پر وار کیا۔ راجکمار کے سر کو چوٹ لگنے پر راجکمار برسرموقع ہلاک ہوگیا۔ راجکمار کی نعش کو کار میں لیکر ماکلور منڈل کے مامڑی پلی کے حدود میں قومی شاہراہ نمبر 63 پر ڈال دیااور سڑک حادثہ میں فوت ہوجانے کی حالت پیدا کی اور یہاں سے راہ فرار اختیار کرلی۔ وی آر او مامڑی پلی نے نامعلوم گاڑی کے زد میں آکر ہلاک ہونے کی ماکلور پولیس اسٹیشن کو اطلاع دی تھی اور نعش کے بارے میں دی گئی اطلاع پر راجکمار کے افراد خاندان فوٹو کی شناخت کرتے ہوئے نعش حاصل کیا تھا اور پولیس اس خصوص میں دریافت کرتے ہوئے مامڑی پلی میں کل دیپک ریڈی اور روی کمار کو تحویل میں لیکر پوچھ تاچھ کرنے پر اقبال جرم کیا۔ ان کے قبضہ سے کار اور مہلوک کا سیل فون برآمد کرتے ہوئے پولیس نے ان دونوں کو گرفتار کرتے ہوئے ریمانڈ پر دے دیا۔

انجذابی گڑھے میں گر
کر کمسن لڑکا ہلاک
بھیمگل۔/8جون، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) موڑتاڑ میں پانچ سالہ لڑکا انجذابی گڑھے میں گر کر ہلاک ہوگیا۔ تفصیلات کے مطابق حکومت کی جانب سے ہر گھر میں پانی کو جذب کرنے کیلئے مفت انجذابی گڑھوں کی کھدوائی کی جارہی ہے۔ ضلع کلکٹر کے احکامات پرمستقر اور منڈل کے مواضعات میں انجذابی گڑھوں کے تعمیراتی کام تیزی سے جارہی ہیں۔ منڈل کے موضع گم ریال میں انجذابی گڑھے کی کھدوائی کرکے چھوڑ دیا گیا۔ جس میں پانی بھرا ہوا تھا۔ پانچ سالہ سنتوش اس گڑھے میں گرگیا۔ گہرائی زیادہ ہونے سے وہ غرق ہوگیا اور موقع پر ہی ہلاک ہوگیا۔

TOPPOPULARRECENT