Wednesday , August 23 2017
Home / ہندوستان / سکماآپریشن : گذشتہ ماہ 18نکسلائٹس ہلاک

سکماآپریشن : گذشتہ ماہ 18نکسلائٹس ہلاک

رائے پور ۔ 6جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) چھتیس گڑھ پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ گذشتہ ماہ ضلع سکما کے تنڈا مارکا علاقہ میں انسداد شورش پسندی کے مشترکہ آپریشن میں 18نکسلائٹس ہلاک کئے گئے ۔ پولیس نے کہا کہ ’ پراہار ‘ نامی آپریشن سنٹرل ریزرو پولیس فورس‘ کمانڈو بٹالین فار ریزالیوٹ ایکشن اور اسٹیٹ پولیس کی اسپیشل ٹاسک فورس نیز ڈسٹرکٹ ریزرو گارڈس نے مل کر 23اور 25جون کے درمیان منعقد کیا ۔ یہ علاقہ چنتاگوفا پولیس اسٹیشن حدود کے تحت جنگل کے اندرون واقع ہے اور اسے نکسلائٹس کا گڑھ سمجھا جاتا ہے ۔ ایک نکسلائٹ کی نعش برآمد کی گئی ۔ سکما سپرنٹنڈنٹ آف پولیس ابھیشیک مینا نے گذشتہ روز کہا کہ پولیس نے 18نکسلائٹس کی موت کی توثیق کی تھی ۔ انہوں نے نیوز ایجنسی پی ٹی آئی کو بتایا کہ کٹر ملٹری کیڈر والا نکسلائٹس یوئیکا لاکھو کی نعش برآمد کی گئی ۔ کئی دیگر باغی ہلاک یا زخمی ہوئے لیکن ان کے ساتھی ان کی نعشیں اٹھاکر لے جانے میں کامیاب ہوئے ۔ ایس پی نے کہا کہ تین ڈی آر جی جوان بھی ہلاک ہوئے اور 6 دیگر سیکورٹی جوان اس آپریشن میں زخمی ہوئے ہیں ۔ ہمیں مصدقہ اطلاعات وصول ہوئی ہیں کہ 14 ماؤنوازوں کو اس آپریشن کے دوران سیکورٹی والوں کے ساتھ فائرنگ کے تبادلہ میں گولی مار دی گئی ‘ جب کہ مزید 4 زخمی کیڈرس بعد میں فوت ہوگئے ۔ 11مارچ کو سکما کے بھیجی علاقہ میں پیش آئے نکسلائٹ حملہ میں 12سی آر پی ایف جوان ہلاک کئے گئے تھے ۔ یہ بات نمایاں ہے کہ نکسلائٹس نے سیکورٹی فورسیس کو سب سے زیادہ جانی نقصان سکما خطہ میں ہی پہنچایا ہے ۔

 

TOPPOPULARRECENT