Wednesday , June 28 2017
Home / دنیا / سکھ شخص کو کرپان ساتھ نہ رکھنے اطالوی عدالت کا حکم

سکھ شخص کو کرپان ساتھ نہ رکھنے اطالوی عدالت کا حکم

لندن ۔ 16 مئی (سیاست ڈاٹ کام) اطالوی سپریم کورٹ نے آج سکھ فرقہ کے ایک درخواست گزار کو سکھ مذہب میں مقدس سمجھی جانے والی کرپان کو استعمال نہ کرنے کی ہدایت جاری کی۔ جج نے اس کیلئے استدلال پیش کیا کہ تارکین وطن جب اپنی پسند اور مرضی کے کسی ملک میں ہمیشہ کیلئے منتقل ہوجاتے ہیں تو انہیں اس ملک کے قوانین کا احترام کرنا چاہئے چاہے وہ قوانین ان کے مذہبی قوانین و ضوابط کے مغائر ہوں۔ اٹالین ہائی کازشین کورٹ نے ہندوستانی سکھ تارک وطن کے خلاف فیصلہ صادر کرتے ہوئے کہا کہ کسی بھی تارک وطن کو اپنے پسندیدہ اور منتخبہ ملک میں رہائش اختیار کرنے کے بعد اس ملک کے قوانین کا احترام کرنا چاہئے اور کھلے عام کرپان (خنجر نما ہتھیار) لیکر چلنا اطالوی قوانین کے مغائر ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT