Saturday , August 19 2017
Home / ہندوستان / سہارنپور کے بعد اب ایٹہ میں ذات پات کا جھگڑا اور تشدد

سہارنپور کے بعد اب ایٹہ میں ذات پات کا جھگڑا اور تشدد

ایٹہ، 08 مئی (یو این آئی)اترپردیش میں سہارنپور کے بعد اب ایٹہ میں بھی ذات پات کے جھگڑے اور تشدد کی وجہ سے کشیدگی پھیل گئی ہے ۔ سینئر پولیس سپرنٹنڈنٹ ستیارتھ انل پنکج کے مطابق سکرولي علاقے کے نگلا بھوراگاؤں میں آج ڈاکٹر بھیم راؤ امبیڈکر کا مجسمہ نصب کرنے کے معاملے پر دوفریقوں کے مابین تنازع ہو گیا۔ مسٹر پنکج نے بتایا کہ بغیر اجازت کے مجسمہ نصب کرنے پر مصرایک فریق نے کافی افہام و تفہیم کے باوجود اپنی ضد نہیں چھوڑی۔ اس سے بڑی ذات والوں میں کشیدگی پھیل گئی۔ موقع پر پولیس کے پہنچتے ہی مجسمہ نصب کرانے پر مصر لوگوں نے پتھراؤ شروع کر دیا۔پتھراؤ میں ایک تھانہ انچارج سمیت کم از کم پانچ پولیس اہلکار بھی زخمی ہو گئے ۔ انہوں نے بتایا کہ صورت حال کو کنٹرول کرنے کے لئے جلیسر کے نائب ضلع مجسٹریٹ اور پولیس سپرنٹنڈنٹ کو موقع پر بھیجا گیا ، لیکن ان پر بھی پتھراؤ کیا گیا۔ سینئر پولیس سپرنٹنڈنٹ کے مطابق مجسمہ کو دلتوں کے حوالے کر دیا گیا ہے ۔ رپورٹ درج کر کے دو افراد کو گرفتار کر لیا گیا ہے ۔ جائے حادثہ پر احتیاطا ارد گردکے نصف درجن تھانوں کی فورس کے ساتھ ایک پلاٹون پی اے سی تعینات کر دی گئی۔ حالات کشیدہ لیکن قابو میں ہے۔ غور طلب ہے کہ دو دن قبل سہارنپور کے شببیرپور گاؤں میں دلتوں اور راجپوتوں میں ہوئے جھگڑے میں ایک شخص کی موت ہو گئی تھی۔

TOPPOPULARRECENT