Friday , June 23 2017
Home / سیاسیات / سہ سالہ این ڈی اے حکمرانی افراتفری ، اُلجھن کی نذر

سہ سالہ این ڈی اے حکمرانی افراتفری ، اُلجھن کی نذر

عوام میں غم و غصہ ، کسانوں کی خودکشی، سپاہیوں کی جانوں کا اتلاف نمایاں باتیں: شیوسینا
ممبئی 18 مئی (سیاست ڈاٹ کام) نریندر مودی زیرقیادت این ڈی اے حکومت کی کارگزاری میں نقائص کی نشاندہی کرتے ہوئے شیوسینا نے آج کہاکہ گزشتہ تین سال افراتفری اور اُلجھن آمیز صورتحال سے پُر رہے ہیں اور کہاکہ کسی بھی قسم کے جشن کا انعقاد  عوام کے غم و غصہ، کسانوں کی اموات اور سپاہیوں کی قربانی کے تئیں بے پروائی قرار پائے گا۔ شیوسینا نے پارٹی ترجمان ’سامنا‘ کے اداریے میں کہاکہ عوام کئی اقدامات پر برہم ہیں، کسانوں کو خودکشی پر مجبور ہونا پڑرہا ہے۔ سپاہیوں کی جانیں یونہی قربان ہورہی ہیں۔ اگر کوئی اب بھی تین سالہ اقتدار کا جشن منانا چاہتا ہے تو اس کا مطلب یہی ہوگا کہ اُنھیں اِن مسائل کی کوئی پرواہ نہیں ہے۔ سینا نے کہاکہ ملک بھر میں جشن کی تقاریب کے انعقاد کے لئے سرکاری خزانوں سے کروڑہا روپئے خرچ کئے جائیں گے اور مطالبہ کیاکہ موجودہ حکومت کام پر کس قدر رقم خرچ کررہی ہے اور اشتہارات پر کتنا خرچ کیا جارہا ہے اُس کا تجزیہ کریں۔ بی جے پی کی حلیف پارٹی نے جس نے حالیہ عرصہ میں بڑی پارٹی کے ساتھ تعلقات تلخ ہوگئے۔ اُس نے کہاکہ سوچھ بھارت ابھیان پر ہزاروں کروڑ روپئے خرچ کردیئے گئے۔ کیا قوم صاف ستھری ہوچکی ہے؟ دریائے گنگا کی صفائی کے لئے مہنگا پروگرام شروع کیا گیا ہے۔ کیا گنگا صاف ہورہی ہے یا حکومتی خزانے خالی ہورہے ہیں۔ اودھو ٹھاکرے زیرقیادت پارٹی نے کہاکہ این ڈی اے کو اچھے دن لانے، کالا دھن کو بیرون ملک سے وطن لانے اور ہر ہندوستانی شہری کے بینک اکاؤنٹ میں 15 لاکھ روپئے جمع کرانے کے وعدوں پر اقتدار سونپا گیا لیکن اِن میں سے کچھ بھی نہیں ہوا ہے۔ اِس کے برخلاف عوام نوٹ بندی کے اقدام سے حیرت میں پڑگئے جس نے کرپشن، کالا دھن، افراط زر جیسے مسائل سے توجہ ہٹادی۔ بی جے پی نے برسر اقتدار آنے کے بعد پاکستان کے خلاف تیز تر کارروائی کا وعدہ کیا تھا لیکن ہر روز جوانوں کو کاٹا جارہا ہے جبکہ حکومت وارننگ پر وارننگ دینے کی حد تک محدود ہے۔ نکسلائٹس نے تباہی مچا رکھی ہے۔ کیا مودی حکومت کو کھوکھلی وارننگ دیتے رہنے کے لئے اقتدار پر لایا گیا؟ آج مجموعی طور پر افراتفری اور اُلجھن کا ماحول برپا ہے۔ بے روزگاری بڑھ رہی ہے اور روپیہ کی قدر گھٹ رہی ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT