Monday , September 25 2017
Home / شہر کی خبریں / سیاسی وفاداریاں تبدیل کرنے والے قائدین کے راز کا عنقریب انکشاف

سیاسی وفاداریاں تبدیل کرنے والے قائدین کے راز کا عنقریب انکشاف

راہول گاندھی سے کانگریس ایم ایل سی پی سدھاکر ریڈی کی ملاقات، سیاسی صورتحال پر بات چیت
حیدرآباد ۔ 9 جولائی (سیاست نیوز) کانگریس کے رکن قانون ساز کونسل مسٹر پی سدھاکر ریڈی نے دہلی پہنچ کر کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی سے ملاقات کی۔ تلنگانہ کے تازہ سیاسی صورتحال سے انہیں واقف کراتے ہوئے کہا کہ سیاسی وفاداریاں تبدیل کرنے والے قائدین کا راز وہ بہت جلد فاش کریں گے۔ مسٹر پی سدھاکر ریڈی ماضی میں سکریٹری اے آئی سی سی کے عہدوں پر خدمات انجام دے چکے ہیں۔ اے آئی سی سی میں تنظیم جدید کی تیاریوں کے پیش نظر ان کی راہول گاندھی سے ملاقات کو سیاسی طور پر اہمیت دی جارہی ہے۔ باوثوق ذرائع سے پتہ چلا ہیکہ کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی نے علحدہ تلنگانہ ریاست تشکیل دینے کے باوجود کانگریس قائدین کی ٹی آر ایس میں شمولیت کی سدھاکر ریڈی سے وجہ طلب کی۔ سدھاکر ر یڈی نے انہیں بتایا کہ ٹی آر ایس میں غیریقینی صورتحال ہے۔ اپنی حکومت کو بچانے اور پارٹی کے اندر پائی جانے والی ناراضگی پر قابو پانے کیلئے چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر کانگریس کے بشمول دوسری جماعتوں کے 47 عوامی منتخب نمائندوں کو حکمران ٹی آر ایس میں شامل کیا ہے۔ اپوزیشن جماعتوں کے قائدین کو دولت اور عہدوں کا لالچ دیا گیا ہے۔ انہوں نے تلنگانہ کی تازہ  سیاسی صورتحال اور مسائل پر کافی دیر تک بات چیت کی۔ بعدازاں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے راہول گاندھی سے ملاقات کو خیرسگالی ملاقات قرار دیا اور کہا کہ کانگریس کے بشمول دوسری جماعتوں کے عوامی منتخب نمائندے جو ٹی آر ایس میں شامل ہوئے ہیں، ان کے خلاف کارروائی کرنے کیلئے قانون میں ترمیم کرانے کی راہول گاندھی سے اپیل کرچکے ہیں۔ کانگریس کے قائدین کو کانگریس پر بھروسہ نہ ہونے سے متعلق سوال کا جواب دیتے ہوئے مسٹر پی سدھاکر ریڈی نے کہا کہ کانگریس کے اصولوں پر یقین رکھتے ہوئے قائدین کانگریس کے ساتھ ہے۔ وہی لوگ ٹی آر ایس میں شامل ہوتے ہیں جنہیں مقابلہ کرکے کامیاب ہونے کا یقین نہیں ہے یا کونسل کی میعاد کو دوبارہ حاصل کرنے کیلئے ٹی آر ایس میں شامل ہوئے ہیں۔ اقتدار اور عہدے مستقل نہیں ہے۔ وفاداری اور عوامی خدمات اہمیت رکھتی ہے۔ سیاسی وفاداریاں تبدیل کرکے ٹی آر ایس میں شامل ہونے والے قائدین کا وہ بہت جلد راز فاش کریں گے۔ انہوں نے کہاکہ گہن کانگریس کیلئے عارضی ہے۔ بہت جلد کانگریس کیلئے بہار آئے گی اور کانگریس عوام کی تائید سے ایک بار پھر طاقتور اور بڑی جماعت بن کر ابھرے گی۔

TOPPOPULARRECENT