Saturday , October 21 2017
Home / Top Stories / سیاہی کی قلت کے باعث کرنسی طباعت متاثر

سیاہی کی قلت کے باعث کرنسی طباعت متاثر

نئی دہلی ۔ /11 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان میں کرنسی کی منسوخی کے بعد نئی کرنسی کی سربراہی کو یقینی بنانا حکومت کے لئے اب مشکل ہوتا جارہا ہے ۔ اگر سینئر وزراء اور بیوریو کریٹس کو اس صورتحال کا علم ہے تو وہ اس پر خاموشی اختیار کرلیں گے ۔ اب نئی کرنسی کا حصول ایک طویل عرصہ تک غیر متوقع ثابت ہوگا ۔ جن منٹس میں نئے کرنسی نوٹوں کی طباعت ہورہی ہے وہ نوٹوں کی پرنٹنگ والی سیاہی (INK) کی قلت پیدا ہوئی ہے ۔ ہندوستان کی جانب سے برطانیہ سے خصوصی سیاہی خریدنے کی کوشش کی جارہی ہے لیکن اس میں بھی کامیابی کا امکان نہیں ہے کیوں کہ کوئینس بنکرس بھی اپنے نئے پانچ پاؤنڈ کے نوٹس کی طباعت میں مصروف ہیں یہاں پر بھی پرنٹنگ مشینوں اور سیاہی کی کمی پائی جاتی ہے ۔ برطانیہ میں کرنسی طباعت کے معیار کو ساری دنیا میں اعلیٰ درجہ حاصل ہے ۔ اس لئے برطانیہ اپنی سیاہی کی ترکیب اور اہمیت کو ہندوستان کے ساتھ حصہ داری کرنا نہیں چاہتا ۔ بظاہر نئے  2000 نوٹوں کی طباعت کے لئے اب حکومت کو ایک غیر معیاری سیاہی کا استعمال کرنا پڑے گا ۔ نئے نوٹوں کی پہلی کھیپ میں رنگ آمیزی ناقص دیکھی جارہی ہے جس کے باعث نوٹوں کا رنگ پانی میں بہت جلد محلول ہورہا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT