Sunday , September 24 2017
Home / اضلاع کی خبریں / سیرت طیبہؐ سے برادران وطن کو واقف کروانا انتہا ئی ضروری

سیرت طیبہؐ سے برادران وطن کو واقف کروانا انتہا ئی ضروری

اسلام کے بارے میں غلط فہمیوں کو دور کرنے یو آئی آر سی کی مہم، گنٹور میں جلسہ، برادر شفیع اور دیگر کا خطاب
گنٹور۔24 اپریل(ذریعہ ای میل)کفار مکہ 21 سال تک رسول اکرم ﷺ کو ستاتے رہے۔ ظلم و ستم کا کوئی حربہ ایسا نہ تھا جو انہوں نے محمد ﷺ پرنہ آزمایا ہو۔ فتح مکہ کے موقع پر اسلام کے یہ بدترین دشمن مکمل طور پر رسول کے رحم و کرم پر تھے اور آپ کا ایک اشارہ ان سب کو خاک و خون میں لوٹا سکتا تھا ۔لیکن محمد ﷺ نے تمام جبارین قریش سے‘ جو خوف اور ندامت سے سر نیچے ڈالے آپ کے سامنے کھڑے تھے پوچھا کہ تمہیں معلوم ہے کہ میں تمہارے ساتھ کیا معاملہ کرنے والا ہوں۔ انہوںنے دبی زبان سے جواب دیا کہ ائے صادق ائے امین آپ ہمارے شریف بھائی ہیں۔ ہم نے تمہیں ہمیشہ رحم دل پایا ہے۔ تو محمد ﷺ نے فرمایا تم پر کچھ الزام نہیں جاو تم سب آزاد ہو۔’’جناب محمد ﷺ ۔دلوں کو جیتنے والے‘‘ کے عنوان پر خطاب کرتے ہوئے مبلغ اسلام اور یو آئی آر سی کے صدر برادر شفیع نے فتح مکہ کے واقعہ کے ساتھ ساتھ کئی واقعات سے غیرمسلموں کو واقف کروایا۔ اسلام کے بارے میں بڑھتی غلط فہمیوں کو ختم کرنے کیلئے یونیورسل اسلامک ریسرچ سنٹر (یو آئی آر سی ) نے دونوں ریاستوں میں مہم شروع کر رکھی ہے۔ اس مہم کے حصہ کے تحت تلنگانہ اور آندھراپردیش کے بڑے بڑے شہروں میں میجر پبپلک میٹنگس ہورہے ہیں ۔اسی سلسلے کا ایک پروگرام گنٹور میں سری وینکٹیشورا وگنانا مندیرم میں منعقد ہوا۔ مبلغ اسلام برادر سراج الرحمن نے ’’اسلام کے بارے میں غلط فہمیاں اور قدیم مذہبی کتابوں سے جوابات‘‘ کے عنوان پر خطاب کیا۔ برادر شفیع نے کہا کہ پیارے نبی محمد ﷺ کی زندگی کے لاتعداد واقعات ایسے ہیں جو کہیں اور دیکھنے کو نہیں ملتے ہیں۔ محمد ﷺ صرف انسانوں تک ہی رحم دل نہیں تھے بلکہ جانوروں کا بھی خیال رکھتے تھے ۔ اس لیے اسلام صرف 23 سال کی مدت میں محمد ﷺ کے اخلاق کی وجہ سے ہی پھیلا ہے۔ انہوں نے اسلام سے مکمل طور پر واقف کرواتے ہوئے مسلمانوں پر زور دیا کہ وہ  پیارے نبی محمد ﷺ کی حیات طیبہ کے تمام واقعات سے تمام انسانوںکو واقف کروائیں۔ ایسے طریقے سے جناب محمد ﷺ کے بارے میں غلط فہمیوں کو ختم کیا جاسکتا ہے۔ محمد ﷺ کی مبارک زندگی کے مکمل واقعات کی صحیح انداز میں تبلیغ نہ ہونے سے دین کا کم علم رکھنے والے مسلمان آسانی کے ساتھ عیسائیوں کے باطل نظریات کا شکار ہورہے ہیں اور یہاں تک کہ ایمان جیسی نعمت سے محروم بھی ہورہے ہیں۔ ان حالات کیلئے ہم مسلمان بھی ذمہ دار ہیں۔ عیسائیوں کے اس سوال پر کہ جو بھی انسان پیدا ہوتا ہے ‘ اُسے شیطان چھُوتا ہے لیکن عیسی ؑ کو شیطان نے چھُوا تک نہیںتو پھر محمد ﷺبہتر ہیں یا عیسی ؑ؟برادر شفیع نے کہا کہ محمد ﷺ قیامت تک کیلئے آخری نبی ہیں اور محمد ﷺ سے پہلے جتنے انبیاء کرام گذر چکے ہیں وہ ایک محدود وقت تک کیلئے تھے اور محمد ﷺ امام الانبیاء اور سب سے افضل ہیں۔ محمد ﷺ کی آمد سے قبل جتنی بھی آسمانی کتابیں نازل کی گئیں تھیں‘ اُس میں آخری نبی محمد ﷺ کی آمد کے بارے میں بتادیا گیا تھا۔ محمد ﷺ کا ارشاد مبارک ہے کہ ہر انسان کے ساتھ ایک شیطان اور فرشتہ ہوتا ہے تو صحابہ نے پوچھا کہ آپ کے ساتھ بھی شیطان ہیں تو محمد ﷺ نے کہا کہ ہاں لیکن اُس نے اسلام قبول کرلیا ہے۔ دوسری طرف حضرت عیسی ؑ کو شیطان نے چھُوا تک نہیں ہے اور اس کی وجہ قرآن میں سورہ آل عمران کی آیت نمبر 35-36 میں بتادی گئی ہے۔ بائبل کے مطابق حضرت عیسی ؑ کو شیطان نے 40 دن تک بہت ستایا اور اُنہیں گمراہ کرنے کی کوشش کی لیکن عیسی ؑ اُن کی زد میں نہیں آئے۔اس واقعہ کا ذکر میتھیو 4:1 میں ہے۔ برادر شفیع نے سوال کرنے والے سے پوچھا کہ اب آپ ہی بتائیے کہ شیطان نے عیسی ؑ کو چھُوا نہیں لیکن گمراہ کرنے کی کوشش ضرور کی لیکن محمد ﷺ کے سامنے شیطان نے اسلام قبول کرلیا۔توبہتر کون ہے‘آپ خود ہی فیصلہ کرسکتے ہیں۔ اس سوال پر کہ عیسی ؑ کا فرمان ہے کہ کوئی ایک تھپڑ مارے تو اُسے دوسرا گال بھی پیش کردو لیکن محمد ﷺ نے آنکھ کے بدلے آنکھ اور جان کے بدلے جان کے بارے میں کہا ہے‘ تو پھرمحمدﷺ دلوںکو جیتنے والے کیسے ہوسکتے ہیں؟ اس پر برادر شفیع نے کہا کہ قرآن میں اللہ کا فرمان ہے کہ معاف کردینا افضل ہے۔ اسی کو محمد ﷺ نے اپنی زندگی میں عمل کرکے بھی بتایا۔ محمد ﷺ کی زندگی کے ایسے واقعات سے واقف کروایا گیا جس میں محمد ﷺ نے بدلہ نہیں لیا اور جان بخش دی۔ ایک گال پر کوئی تھپڑ مارے تو دوسرا گال پیش کرو‘ حضرت عیسی ؑ کے اس فرمان پر عمل کرنا ممکن نہیں ہے۔ مثال کے طور پر آپ کے گھر میں کوئی چور آیا اور اُس نے ایک الماری سے پیسے نکال لیے تو کیا آپ اسے پکڑیں گے یا دوسری الماری بھی بتائیںگے جس میں پیسے رکھے ہوں۔ اب آپ بھی فیصلہ کرلیجئے کہ دلوں کو جیتنے والا عمل کونسا ہے۔ اس موقع پر برادر شفیع نے کئی اور سوالات کے جوابات بھی دیئے۔غیرمسلموں تک اسلام پہنچانے کیلئے آپ ہم سے 7842426463 پر رابطہ کرسکتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT