Friday , October 20 2017
Home / شہر کی خبریں / سیمسٹر امتحانات کا بائیکاٹ کرنے کی دھمکی

سیمسٹر امتحانات کا بائیکاٹ کرنے کی دھمکی

فیس باز ادائیگی بقایہ جات فوری ادا کرنے پرائیوٹ کالجس انتظامیہ کا مطالبہ
حیدرآباد 4 ڈسمبر (سیاست نیوز) پرائیوٹ ڈگری کالجس فیس باز ادائیگی بقایہ جات مسئلہ پر حکومت سے تصادم کے موڈ میں ہیں اور 6 ڈسمبر سے شروع ہونے والے سیمسٹر امتحانات کے بائیکاٹ کی دھمکی دی ہے۔ یہاں اس بات کا ذکر ضروری ہے کہ پرائیوٹ ڈگری کالجس نے اکٹوبر میں سپلیمنٹری امتحانات کا بائیکاٹ کیا تھا۔ حکومت کی طرف سے 254 کروڑ روپئے کے بقایہ جات کی ادائیگی پر غصہ تھما تھا لیکن حکومت چار سو کروڑ روپئے کے بقایہ جات جاری کرنے میں ناکام رہی ہے۔ اس لئے پرائیوٹ کالجس کا انتظامیہ پھر سے احتجاج کے موڈ میں ہے۔ اب سیمسٹر امتحانات کے بائیکاٹ کی دھمکی دی گئی ہے۔ پرائیوٹ ڈگری کالجس مینجمنٹس اسوسی ایشن کے صدر رمنا ریڈی نے کہاکہ حکومت اپنا وعدہ پورا کرنے میں ناکام ہوچکی ہے۔ اس لئے ہم دوبارہ امتحانات کا بائیکاٹ کرنے پر مجبور ہیں۔ حکومت نے 30 جون 2016 ء تک تمام بقایہ جات جو 3 ہزار 65 کروڑ روپئے ہیں ادا کرنے کا تیقن دیا تھا۔ یہ رقم تعلیمی سال 2014-15 ء سے ادا شدنی ہے۔ طلبہ برادری میں غیر یقینی صورتحال سے بے چینی پائی جاتی ہے۔ تقریباً 2 لاکھ تیس ہزار سال اول کے طلبہ اپنے مستقبل کے بارے میں فکرمند ہیں۔

TOPPOPULARRECENT