Thursday , August 17 2017
Home / شہر کی خبریں / سیکریٹریٹ کے انہدام کی تیاریاں مکمل ‘ دفاتر کی منتقلی کیلئے احکام

سیکریٹریٹ کے انہدام کی تیاریاں مکمل ‘ دفاتر کی منتقلی کیلئے احکام

انتظامیہ کو موثر اور کرپشن سے پاک بنانے کی عہدیداروں کو ہدایت ۔ چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ کا جائزہ اجلاس

حیدرآباد ۔ 24 اکٹوبر ( سیاست نیوز) سکریٹریٹ کے انہدام کی تمام تیاریاں مکمل ہوگئی ہیں ‘ مختلف محکمہ جات کو مختلف مقامات اور برگولہ راما کرشنا راؤ بھون میں منتقل کرنے کی ہدایت دی گئی ہے ۔ چیف منسٹر کے سی آر نے آج اعلیٰ سطحی اجلاس میں یہ فیصلہ کیا ہے ۔ اضلاع کی تنظیم کے بعد کلکٹرس کو ہدایت دی گئی ہیکہ ضلع سطح پر موجود وسائل اور عوامی ضروریات کی تکمیل کو پورا کرنے مستقبل کے لائحہ عمل تیار کریں ‘ بدعنوانیوں سے پاک نظم و نسق تیار کریں تاکہ فلاحی اسکیمات کے ثمرات غریب عوام تک پہنچ سکے ۔ چیف منسٹر کے سی آر نے آج کیمپ آفس پر اعلیٰ عہدیداروں کا اجلاس طلب کیا جس میں چیف سکریٹری راجیو شرما ‘ سینئر عہدیدار بی پی آچاریہ نرسنگ راؤ ‘ شانتا کماری ‘ جناردھن ریڈی ‘ راہول بوجہ ‘ کرونا ‘ رگھونندن ‘ ستیہ نارائنا ریڈی ‘ سمتا سبھروال ‘ پرینکا ورگس اور بھوپال ریڈی کے علاوہ دوسروں نے شرکت کی ۔ ذرائع سے پتہ چلاہیکہ چیف منسٹر نے سکریٹریٹ کے احاطہ میں موجود عمارتوں کے انہدام اور نئی عمارت تعمیر کرنے کے علاوہ سکریٹریٹ کیلئے  درکار دیگر بنیادی سہولتوں کی فراہمی کے بارے میں جائزہ لیا اور چند محکموں کے سربراہان کو خصوصی احکامات جاری کئے ۔ سکریٹریٹ دفاتر میں چند دفاتر کو ہیڈ آف دی ڈپارٹمنٹس اور چند دفاتر کو برگولہ راما کرشنا راؤ بھون میں منتقل کرنے کی ہدایت دی ۔ چیف منسٹر نے کہا کہ تلنگانہ نظم و نسق میں وسیع تر اصلاحات لاتے ہوئے اقتدار کو عوام کے بالکل قریب کردیا گیا ہے ۔ نئے اضلاع ‘ ڈیویژنس اورمنڈلس تشکیل پانے کے بعد کلکٹرس اور دوسرے عہدیداروں کا عوام سے قریبی رشتہ جڑگیا ہے ۔ فلاحی اسکیمات پر عمل آوری اور اسکے ثمرات غریب عوام تک پہنچ رہے ہیں یا نہیں اس کا جائزہ لینے کی ذمہ داری کلکٹرس کے سپرد ہوگئی ہے ۔کلکٹرس اپنے اضلاع کے وسائل کے بارے میں معلومات اکٹھا کریں اور ترقیاتی کاموں کیلئے حکمت عملی تیار کریں ۔ تلنگانہ کے مستقبل کی 8تا 10سالہ ترقی پر مشتمل منصوبہ بندی تیار کرنے کی ہدایت دی ۔ ترقی کو اضلاع کے صرف ایک حصہ تک محدود کرنے کے بجائے سارے ضلع کو ترقی کا حصہ دار بنانے کے احکامات جاری کئے ۔ اضلاع کی تنظیم جدید سے عوام کو موثر انداز میں خدمات فراہم کرنے انہیں ترقی میں برابر کا حصہ دار بناکر فلاحی اسکیمات کی عمل آوری پر خصوصی نگرانی رکھنے پر زور دیا ۔       ( باقی سلسلہ صفحہ 8 پر )

TOPPOPULARRECENT