Thursday , September 21 2017
Home / Top Stories / سیکوریٹی فورسیس کو تحمل کا مظاہرہ کرنے راجناتھ سنگھ کی ہدایت

سیکوریٹی فورسیس کو تحمل کا مظاہرہ کرنے راجناتھ سنگھ کی ہدایت

کشمیر کا دورہ ،تمام فریقین سے فوری بات چیت کیلئے عمر عبداللہ کی نمائندگی

سرینگر ۔ 24 اگست (سیاست ڈاٹ کام) مرکز کی پہل کے حصہ کے طور پر وزیرداخلہ راجناتھ سنگھ نے آج جاریہ ماہ کے دوران دوسری مرتبہ بدامنی سے متاثرہ کشمیرکا دورہ کیا۔ یہاں انہوں نے سیاسی قائدین سے بات کی۔ جنہوں نے کہا کہ جموں کشمیر میں مسائل کا دیرپا حل تلاش کرنے کیلئے مرکز کو تمام فریقین سے مذاکرات کرنا چاہئے۔ سرینگر روانگی سے قبل  مرکزی وزیرداخلہ راجناتھ سنگھ نے کہا کہ وہ کشمیر میں مختلف حاملین مفاد کے ساتھ بات چیت منعقد کریں گے اور ان تمام کو مدعو کیا جو ’کشمیریت، انسانیت اور جمہوریت‘ پر ایقان رکھتے ہیں۔ ان کا یہ بیان ایسے وقت سامنے آیا جبکہ ضلع پلوامہ میں احتجاجیوں اور سیکوریٹی فورسیس کے مابین تازہ جھڑپیں شروع ہوگئی جن میں ایک نوجوان ہلاک ہوگیا۔ وادی میں 8 جولائی سے جاری بدامنی میں اب تک 66 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ راجناتھ سنگھ نے انتہائی سخت سیکوریٹی میں آج اس شہر کا دورہ کیا جو انتہائی کشیدہ ہے۔ یہاں دونوں طرف پیرا ملٹری فورسیس تعینات کی گئی تھی تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جاسکے کہ سڑک پر انہیں احتجاجیوں کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

راجناتھ سنگھ نے جن کے ہمراہ مرکزی معتمد داخلہ راجیو مہرشی اور دیگر عہدیدار بھی ہیں، یہاں نہرو گیسٹ ہاؤز پہنچتے ہی فوری انتظامی شعبوں سے تعلق رکھنے والے مختلف عہدیداروں بشمول سیکوریٹی، ہیلت اور اشیائے ضروریہ کی سربراہی سے تعلق رکھنے والوں سے بات چیت کی۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ راجناتھ سنگھ نے پیراملٹری فورسیس کے سربراہ سے کہا کہ لا اینڈ آرڈر کی صورتحال سے نمٹنے کے معاملہ میں حتی الامکان صبر وتحمل کا مظاہرہ کریں۔ وزیرداخلہ کو بتایا گیا کہ مجموعی صورتحال میں بہتری آئی ہے۔ یہاں اشیائے ضروریہ کی کوئی قلت نہیں ہے اور صحت کے شعبہ میں بھی خدمات انجام دی جارہی ہے۔ کشمیر میں 47 دن قبل حزب المجاہدین کمانڈر برہان وانی کی ہلاکت کے بعد تشدد پھوٹ پڑا اور اس دوران راجناتھ سنگھ کا یہ دوسرا دورہ ہے۔ جائزہ اجلاس کے بعد وزیرداخلہ نے پیراملٹری فورسیس اور ریاستی پولیس سربراہ کے ساتھ علحدہ اجلاس منعقد کئے۔ بعدازاں اپوزیشن نیشنل کانفرنس کے وفد نے سابق چیف منسٹر عمر عبداللہ کی قیادت میں وزیرداخلہ سے ملاقات کی اور کشمیر میں ہجوم پر قابو پانے کیلئے پلیٹ گنس کے استعمال پر فوری امتناع کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے ریاست کو درپیش مسائل کا مستقل حل تلاش کرنے کیلئے جموں و کشمیر میں تمام فریقین سے مذاکرات شروع کرنے کا بھی مرکز سے مطالبہ کیا۔ بی جے پی کے قومی سکریٹری رام مادھو نے دہلی میں ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کو بتایا کہ وزیرداخلہ ان تمام سے ملاقات کریں گے جو جموں و کشمیر کی صورتحال کے بارے میں بات کرنا چاہتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT