Tuesday , October 17 2017
Home / شہر کی خبریں / شادیوں میں بیجا اسراف کیخلاف جمعیت القریش کی مہم

شادیوں میں بیجا اسراف کیخلاف جمعیت القریش کی مہم

فضول خرچی پر 50,000 روپئے جرمانہ عائد کرنے کا فیصلہ، جہیز کی سخت مخالفت، قراردادیں منظور: الحاج محمد سلیم

حیدرآباد 19 جولائی (سیاست نیوز) آل انڈیا جمعیت القریش حیدرآباد نے شادی تقاریب میں اسراف سے بچنے کے لئے سخت فیصلہ لیا ہے۔ شادی میں ایک کھانا اور ایک میٹھا کو لازم کرتے ہوئے بے جا اسراف کی تقاریب کے بائیکاٹ کا فیصلہ کیا ہے اور ساتھ ہی ایسی تقاریب کے ذمہ داروں کے خلاف 50 ہزار روپئے جرمانہ عائد کیا جائے گا۔ آل انڈیا جمعیت القریش حیدرآباد کا جنرل باڈی اجلاس آج منعقد ہوا۔ صدر گریٹر حیدرآباد الحاج محمد سلیم رکن قانون ساز کونسل و قائد ٹی آر ایس اس جنرل باڈی اجلاس کی صدارت کررہے تھے۔ اجلاس میں کئی اہم قراردادیں منظور کی گئیں۔ بالخصوص شادی میں یہی اسراف اور بڑے جانوروں کے تاجرین کو ہراسانی کے خلاف اہم فیصلہ کیا گیا۔ جنرل باڈی اجلاس میں تاجرین کو ہراسانی کے خلاف چیف منسٹر سے نمائندگی کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ بعدازاں آل انڈیا جمعیت القریش گریٹر حیدرآباد کے صدر محمد سلیم نے کہاکہ شادیوں میں اسراف کو روکنے کا اہم مقصد نکاح کو آسان بنانا ہے۔ انھوں نے کہاکہ اللہ اور اس کے رسول ﷺ کی ناراضگی سے بچنے کے لئے اسراف ترک کرنا ہوگا۔ انھوں نے بتایا کہ رسم سادگی سے کیا جائے گا اور سانچک شادی خانوں میں انجام نہیں دی جائے گی۔ اس کے علاوہ ایسی شادی کا بھی بائیکاٹ کیا جائے گا جہاں جوڑے کی رقم اور جہیز لیا یا پھر دیا جاتا ہو۔ الحاج محمد سلیم نے کہاکہ قریش برادری میں یکم اگسٹ سے اس فیصلے پر سختی سے عمل کیا جائے گا اور ایسی شادیوں کی جانکاری اور نگرانی کے لئے ایک کمیٹی قائم کی جائے گی۔ انھوں نے بتایا کہ ایک کھانا ایک میٹھا کے ساتھ ساتھ گانے بجانے اور آتش بازی پر بھی پابندی لگادی گئی ہے اور کسی بھی قسم کی فضول خرچی کو قبول نہیں کیا جائے گا۔ انھوں نے کہاکہ ان فیصلوں کا مقصد نکاح کو آسان بنانا ہے۔ چونکہ برادری اور سماج میں ایسے غریب ہیں جو محض اسراف کے سبب شادیوں کی انجام دہی میں تاخیر کررہے ہیں اور سماج اور قوم کیلئے درست بات نہیں ہے۔ انھوں نے بڑے جانوروں کے تاجرین کے ساتھ ہراسانی کے واقعات پر تشویش کا اظہار کیا اور کہاکہ ریاست تلنگانہ کے سرحدی اضلاع بہت متاثر ہیں اور داخلہ کے مقامات پر تاجرین کو ظلم و زیادتی کا نشانہ بنایا جارہا ہے۔ انھوں نے ان واقعات پر سخت برہمی ظاہر کرتے ہوئے جمعیت القریش کو اس بات کا یقین دلایا کہ وہ چیف منسٹر تلنگانہ سے اس معاملہ میں نمائندگی کریں گے اس کے علاوہ ریاستی وزیرداخلہ اور ڈائرکٹر جنرل آف پولیس کو بھی یادداشت پیش کی جائے گی۔ اس موقع پر جنرل سکریٹری آل انڈیا جمعیت القریش عبدالقادر، نائب صدور خواجہ پاشاہ، محمد محمود، معین الدین قریشی کے علاوہ حمید چودھری، اسماعیل ایڈوکیٹ، نواب و دیگر موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT