Wednesday , September 20 2017
Home / اضلاع کی خبریں / شادی مبارک اسکیم میں درمیانی افراد کی چاندی

شادی مبارک اسکیم میں درمیانی افراد کی چاندی

اوٹکور۔6نومبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) شادی مبارک اسکیم میں کمیشن ایجنٹ پر عوام کو لوٹ کر پیسہ کمانے کا الزام جناب محمد امتیاز نگری کنوینر ویلفیر پارٹی آف انڈیا شاخ اوٹکور نے ’’سیاست نیوز‘‘ کو بتایا ۔ انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت نے مسلم اقلیتی طبقہ کی غریب و نادار لڑکیوں کی شادی میں 51ہزار روپئے امداد پرمشتمل شادی مبارک اسکیم کا آغاز اکٹوبر 2014 سے کیا ۔ ٹی آر ایس حکومت نے مسلم اقلیتی طبقہ کی غریب لڑکیوں کے متعارف کردہ شادی مبارک اسکیم کے تحت فی درخواست 51 ہزار روپئے منظور کرنے پر جہاں غریب والدین کو خوشی کا اظہار کررہے ہیں ‘ ساتھ ہی ساتھ اس اسکیم میں کمیشن اور ایجنٹ بہت سرگرم ہونے کی اطلاعات پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ شادی مبارک اسکیم سے شعور بیداری نہ کئے جانے سے خواہشمند غریب خاندان درخواست فارم کی خانہ پُری ‘ ادخال اور دوسری تفصیلات سے بیچارے ناواقف ہونے کی وجہ سے مقامی کمیشن ایجنٹس اس کا پورا فائدہ اٹھا رہے ہیں ۔ 51ہزار میں 15ہزار کمیشن ایجنٹ کھارہے ہیں اور کمیشن حضرات اس بات کا بھرپور فائدہ اٹھاتے ہوئے درخواست فارم کی خانہ پوری و دیگر اُمور کی تکمیل کی بات کرتے ہوئے غریب پر موقع کا فائدہ اٹھاتے ہوئے کمیشن کی شکل میں 10تا 15ہزار روپئے کا مطالبہ کررہے ہیں اور غریب مستحق خاندان قوائد کی تکمیل سے قاصر ہونے کے باعث دلالدوں کا بازار گرم ہے ۔ شادی مبارک اسکیم میں مقامی طور سے بھی ضلعی میناریٹی دفتر تک کمیشن ایجنٹ حضرات فائدہ اٹھاتے ہوئے اپنے جیب گرم کررہے ہیں ۔ اس لئے مقامی سیاسی حضرات سے گذارش ہیکہ شادی مبارک اسکیم پر عریبوں کو تعاون کریں اور اپنے علاقوں سے تعلق رکھنے والے قریب خاندانوں کو مسفید کرانے میں دلچسپی لیں اور کمیشن ایجنٹ کے جھانسہ سے روکا جائے اور عریبوں کو بھرپور فائدہ حاصل ہو ۔

TOPPOPULARRECENT