Wednesday , August 23 2017
Home / شہر کی خبریں / شادی مبارک اسکیم کے زیر التواء درخواستوں کی جانچ کے لیے حج کمیٹی ملازمین کی خدمات

شادی مبارک اسکیم کے زیر التواء درخواستوں کی جانچ کے لیے حج کمیٹی ملازمین کی خدمات

دسمبر میں 2016 کے لیے درخواستوں کی اجرائی ، اسکیم میں بے قاعدگیوں پر حکومت کا اقدام
حیدرآباد۔/13نومبر، ( سیاست نیوز) حیدرآباد میں ’شادی مبارک‘ اسکیم کی زیر التواء درخواستوں کی تعداد میں بڑھتے اضافہ کو دیکھتے ہوئے ڈائرکٹر اقلیتی بہبود جلال الدین اکبر نے حج کمیٹی کے9 ملازمین کی خدمات حاصل کی ہیں تاکہ درخواستوں کی جانچ کا کام لیا جاسکے۔ بتایا جاتا ہے کہ سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل کی ہدایت پر اسپیشل آفیسر حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور نے 9 ملازمین کی خدمات حوالے کی ہیں تاکہ ان سے ’شادی مبارک‘ کی درخواستوں کی یکسوئی کا کام لیا جاسکے۔ سکریٹری نے دو ماہ کیلئے ان ملازمین کی خدمات حوالے کرنے کی ہدایت دی تھی۔ بتایا جاتا ہے کہ حیدرآباد میں اسٹاف کی کمی کے باعث شادی مبارک اسکیم کی زیر التواء درخواستوں کی تعداد بڑھ کر 3000 ہوچکی ہیں اور حکومت ان درخواستوں کی عاجلانہ یکسوئی کے حق میں ہے۔ مستقل اسٹاف کی کمی کے باعث آؤٹ سورسنگ کے چند ملازمین کے ذریعہ درخواستوں کی جانچ کا کام لیا جارہا تھا لیکن اس میں مبینہ بے قاعدگیوں کی شکایت کے بعد مستقل ملازمین کی خدمات حاصل کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ حیدرآباد اور رنگاریڈی کے ڈسٹرکٹ میناریٹی ویلفیر دفاتر میں اسٹاف کی کمی ہے اور درخواستوں کی تعداد میں روز افزوں اضافہ ہورہا ہے۔ شادی مبارک اسکیم پر عمل آوری کے سلسلہ میں  اینٹی کرپشن بیورو کی جانب سے نظر رکھے جانے کے باعث دیگر اداروں کے ملازمین اس اسکیم میں خدمات انجام دینے تیار نہیں اور وہ پولیس کی نگرانی کے باعث خوف کا شکار ہیں۔ ڈسمبر میں حج 2016کیلئے درخواستوں کی اجرائی کا عمل شروع ہوگا اور توقع ہے کہ اس وقت وقف بورڈ یا اردو اکیڈیمی سے ملازمین کو اس کام کیلئے حاصل کیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT