Monday , August 21 2017
Home / کھیل کی خبریں / شاراپوا پر دو سالہ پابندی ، روسی ٹینس اسٹار اپیل کریں گی

شاراپوا پر دو سالہ پابندی ، روسی ٹینس اسٹار اپیل کریں گی

لندن ، 9 جون (سیاست ڈاٹ کام) انٹرنیشنل ٹینس فیڈریشن (آئی ٹی ایف) نے ڈوپنگ قوانین کی خلاف ورزی کی پاداش میں روسی ٹینس اسٹار ماریا شاراپوا پر دو سال کی پابندی عائد کردی ہے۔ اُن کا ڈوپ ٹسٹ رواں سال جنوری میں آسٹریلین اوپن کے دوران لیا گیا تھا اور اُن کے ٹسٹ کے نمونوں میں میلڈونیم نامی ممنوعہ دوا پائی گئی۔ آئی ٹی ایف کی ویب سائٹ پر موجود اعلامیے میں بتایا گیا کہ خودمختار ٹربیونل نے اینٹی ڈوپنگ قوانین کے آرٹیکل کے تحت ٹینس اسٹار پر دو سال کی پابندی عائد کی ہے جس کا اطلاق 26 جنوری 2016ء سے ہوگا۔ دوسری جانب شاراپوا نے پابندی کے خلاف اپیل کا اعلان کیا ہے۔ انہوں نے اپنے فیس بک اکاؤنٹ پر ٹربیونل کے فیصلے کو درست قرار دیا۔ تاہم انھوں نے کہا کہ انہوں نے قوانین جان بوجھ کر نہیں توڑے جس کی سزا دو سالہ پابندی مناسب نہیں۔ انہوں نے بتایا کہ ’’ٹربیونل کے اراکین نے اتفاق کیا کہ میں نے جان بوجھ کر کچھ نہیں کیا، اس کے باوجود وہ مجھے ٹینس سے دو سال تک دور رکھنا چاہتے ہیں‘‘۔ شاراپوا نے یہ بھی کہا کہ وہ فوری طور پر کھیلوں کی عالمی ثالثی عدالت میں اس حوالے سے اپیل کریں گی۔ اس سال جنوری میں آسٹریلین اوپن میں شاراپوا کے ایک اور ٹسٹ میں ایک کیمیائی عنصر میلڈونیم پائے جانے کے بعد ان پر عارضی طور پر پابندی لگا دی تھی۔ امراض دل میں استعمال کی جانے والے دوا کے بارے میں شاراپوا نے کہا کہ وہ یہ دوا 2006ء سے طبی وجوہات کی بنا پر استعمال کر رہی تھی۔ یہ دوا جنوری 2016ء میں ممنوعہ قرار دے دی گئی تھی۔ آئی ٹی ایف نے کہا ہے کہ یہ پابندی گزشتہ جنوری سے لاگو ہو گی جب شاراپوا کا ٹسٹ مثبت آیا تھا۔ انھوں نے کہا کہ انٹرنیشنل ٹینس فیڈریشن کے ٹربیونل نے اپنے فیصلے میں کہا ہے کہ جو کچھ انھوں نے کیا وہ دانستہ نہیں تھا۔ انھوں نے مزید کہا کہ ٹربیونل سے فیڈریشن نے چار سال کی پابندی لگانے کی سفارش کی تھی جو سزا دانستہ خلاف ورزی کے تحت دی جاتی ہے لیکن ٹربیونل نے اس سفارش کو نظر انداز کرتے ہوئے دو سال کی پابندی لگائی ہے۔ انھوں نے کہا کہ وہ جو درست سمجھتی ہیں ، اس کیلئے لڑیں گی اور جتنی جلدی ممکن ہو گا وہ کورٹ پر واپس آنے کی کوشش کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT