Wednesday , August 16 2017
Home / دنیا / شام میں صرف عسکری مشیر بھیجے ہیں: ایران

شام میں صرف عسکری مشیر بھیجے ہیں: ایران

تہران ۔ 17 اکٹوبر۔(سیاست ڈاٹ کام) ایران کی وزارت خارجہ نے ایک بارپھر شام میں ایرانی فوجیوں کی موجودگی کی سختی سے تردید کی اور کہا کہ صدر بشارالاسد کی مدد اور رہنمائی کیلئے صرف عسکری مشیر بھیجے گئے ہیں۔ اس کے علاوہ تہران کا کوئی فوجی شام کے محاذ جنگ میں شامل نہیں۔خبر رساں ایجنسی ’فارس‘ نے وزارت خارجہ کے ایک ذریعے کے حوالے سے اطلاع دی ہے کہ ایران اور شام کے تعلقات اور تعاون میں کسی قسم کی تبدیلی رونما نہیں ہوئی ہے۔ ہمارے عسکری مشیر شام میں موجود ہیں جو بشارالاسد کی معاونت کررہے ہیں۔امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ نے ایرانی وزارت خارجہ کے ایک ذریعے کے حوالے سے بتایا کہ امریکہ کا یہ دعویٰ غلط ہے کہ ایران شام میں مزید سیکڑوں جنگجو یا فوجی بھیجنے کا ارادہ رکھتا ہے۔ حال ہی میں امریکی اخبارات نے یہ دعویٰ کیا تھا کہ ایرانی حکومت شام میں صدر بشارالاسد کو بچانے کیلئے مزید فوجی اور جنگجو بھیجنے کی تیاری کررہا ہے۔ یہ فوجی شامی حکومت کے زیرانتظام حساس علاقوں میں سکیورٹی کے فرائض انجام دیں گے۔شام میں ایرانی فوجی بھجوانے کی خبریں محض ذرائع ابلاغ تک محدود نہیں ہیں۔ ایرانی پارلیمنٹ کی خارجہ و سیاسی امور سے متعلق کمیٹی کے چیئرمین علاء الدین بروجردی کا بھی حال ہی میں ایسا ہی ایک بیان سامنے آیا ہے جس میں انہوں نے کہا ہے کہ ان کا ملک شام کی ہرممکن مدد کررہا ہے۔ ضرورت پڑنے پر مزید جنگجو شام بھیجے جا سکتے ہیں۔’مزید‘ سے یہ اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ شام میں ایران فوج اور جنگجو پہلے سے بھی موجود ہیں۔

TOPPOPULARRECENT