Friday , August 18 2017
Home / Top Stories / شام کی خانہ جنگی میں بچوں کے حالِ زار کی منہ بولتی تصویر

شام کی خانہ جنگی میں بچوں کے حالِ زار کی منہ بولتی تصویر

حلب ۔ /18 اگست (سیاست ڈاٹ کام) شہر حلف میں ایک بچے کی ایمبولینس پر دواخانہ منتقلی کی تصویر شام کی خانہ جنگی میں بچوں کے حال زار کی منہ بولی تصویر ہے ۔ صدمہ سے دوچار یہ بچہ جو گرد میں اٹا ہوا اور خون میں نہایا ہوا صدمہ سے اتنا دوچار ہے کہ رو بھی نہیں سکتا اور نہ کوئی سرگوشی کرسکتا ہے ۔ وہ صرف سامنے کی سمت گھورتا رہتا ہے ۔ صدمہ کی وجہ سے اس کا چہرہ جذبات سے عاری ہے ۔ ویڈیو اور تصاویر جو شام کے زخمی بچے کی ہیں جو شہر حلف میں ایک ایمبولینس میں بیٹھا ہوا ہے ۔ اس کے مکان کے ملبہ سے نکالا گیا ہے ۔ یہ تصویریں سماجی ذرائع ابلاغ پر شائع کردی گیئں جس کی وجہ سے شام کے اس ننتھے بچے کی یاد تازہ ہوگئی جو بہہ کر ترکی کے ساحل پر مردہ حالت میں دستیاب ہوا تھا ۔ یہ ایک چھوٹا بچہ ہے جس کی تفصیلات دستیاب نہیں ہیں صرف پتہ چلا ہے کہ اس کا نام عمران داخنش ہے اور عمر چار یا پانچ سال کی ہے ۔ ایک اخباری نمائندے کے بموجب داغنش اس کا اصلی نام نہیں ہے بلکہ خاندانی نام پوشیدہ رکھنے کیلئے رکھ دیا گیا ہے ۔ ننگے پیر یہ بچہ ایک نیکر اور کارٹون چھپی ہوئی ٹی شرٹ میں ملبوس ہے اور امکان ہے کہ ٹنڈر گارٹن کا طالبعلم تھا۔ اس کی تصویریں یو ٹیوب پر شائع ہوچکی ہیں ۔ جس کی وجہ سے پوری دنیا سے ہمدردی کے پیغامات وصول ہورہے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT