Friday , July 21 2017
Home / عرب دنیا / شام کے فوجی کیمپ پر اسرائیل کا حملہ ‘3ہلاک

شام کے فوجی کیمپ پر اسرائیل کا حملہ ‘3ہلاک

گولان پہاڑیوں کی شامی فوج کے مورچوں پر حملہ ‘ جوابی کارروائی ہونے کا اسرائیلی ادعا

دمشق ۔ 23اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) اسرائیل نے آج حکومت کی وفادار فوجوں کے ایک شامی کیمپ پر حملہ کر کے گولان پہاڑیوں کے قریب تین جنگجوؤں کو ہلاک کردیا ۔ فوج کے ایک عہدیدار نے کہا کہ دو جنگجو زخمی بھی ہوئے ۔ اسرائیل کا یہ حملہ جنوب مغربی شام کا علاقہ قنیطرہ کے قریب الفوار کیمپ پر کیا گیا تھا ۔ ہنوز یہ واضح نہیں ہوسکا کہ اس حملہ سے کتنے افراد متاثر ہوئے اور کتنا مالی نقصان ہوا ۔ یہ ایک فضائی حملہ یا شلباری تھی ۔ شام کی رصدگاہ برائے انسانی حقوق نے آج کے حملہ کی توثیق کی لیکن مزید تفصیلات کا انکشاف نہیں کیا ۔ اسرائیل کی فوج نے جمعہ کے دن کہا تھا کہ اُس نے شام کی سرزمین پر حکومت کے مورچوں کو حملہ کا نشانہ بنایا ہے ۔ اس کا دعویٰ تھا کہ گولان پہاڑیوں کے شمالی حصہ پر مارٹر حملہ کی یہ جوابی کارروائی ہے ۔ شام کے سرکاری خبررساں ادارہ صنعا نے کہا کہ اسرائیل نے شامی فوج کے مورچوں پر سطح مرتفع پر گولان پہاڑیوں کے علاقہ قنیطرہ میں حملہ کیاہے ۔ شام کی حکومت کے باغی گروپس اور جہادی حکومت خلاف جنگ کررہے ہیں ۔ انہوں نے حکومت اسرائیل پر اپنی ہیکنگ کا الزام عائد کیا ہے ۔ اسرائیل نے 1200مربع کلومیٹر رقبہ پر 1965ء کی چھ روزہ جنگ میں قبضہ کرلیا تھا ۔ یہ علاقہ شام کی ملکیت ہے ۔ بعدازاں اسرائیل نے بین الاقوامی برادری کی منظوری کے بغیر گولان پہاڑیوں کو اسرائیل میں شامل کرلیا ۔ بین الاقوامی ادارہ نے ابھی تک اسرائیل کے اس اقدام کو تسلیم نہیں کیا ہے ۔ 510مربع کلومیٹر گولان پہاڑیوں کا علاقہ شام کے قبضہ میں اب بھی باقی ہے ۔ دونوں ممالک ٹیکنیکی اعتبار سے ایک دوسرے کے خلاف جنگ کی حالت میں ہے ‘ حالانکہ سرحد وسیع پیمانے پر 2011ء سے اب تک پُرسکون ہے ۔ 2011ء میں شام میں خانہ جنگی کا آغاز ہوا ۔ اسرائیل نے منتشر حملے کئے ہیں جنہیں وقفہ وقفہ سے فائرنگ قرار دیا جاسکتا ہے ۔ اسرائیل نے حال ہی می جوابی فائرنگ کی تھی ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT