Thursday , August 24 2017
Home / دنیا / شام کے نئے دستور کے مسودہ کی اگست تک تکمیل

شام کے نئے دستور کے مسودہ کی اگست تک تکمیل

وزیرخارجہ امریکہ اور وزیرخارجہ روس کی مشترکہ پریس کانفرنس
ماسکو ۔ 25 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ کے وزیر خارجہ جان کیری کا کہنا ہے کہ امریکہ اور روس اس بات پر متفق ہیں کہ شام کا نیا آئین اگست تک تیار کر لیا جائے۔ اس بات کا اعلان جمعرات کی شب امریکی وزیر خارجہ جان کیری نے ماسکو میں روسی کے صدر سے ملاقات کے بعد کیا۔ انھوں نے بتایا کہ دونوں ملک اس بات پر متفق ہیں کہ شام میں سیاسی حکومت کی منتقلی کے لیے روس کی حکومت اور باغیوں کے مابین مذاکرات کا عمل تیز کیا جائے۔ ’شام امن مذاکرات کے لیے پیشگی شرائط سے گریز کرے‘ اسی سلسلے میں امن مذاکرات کا ایک اور دور جینوا میں جمعرات کو اختتام پذیر ہوا ہے۔ شام سے روسی افواج کے انخلا کے اعلان کے بعد امریکی وزیر خارجہ ماسکو کے دس روزہ دورے پر ہیں۔ اپنے روسی ہم منصب سرگئی لاروف کے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس میں جان کیری نے کہا کہ ’ہم نے عبوری سیاسی حکومت اور آئین کے مسودے کی تیاری کے لیے اپنے اہداف مقرر کر لیے ہیں اور ہم اسے اگست تک مکمل کر لیں گے۔‘ مسٹر کیری نے یہ نہیں بتایا کہ روسی حکام سے بات چیت کے دوران شام کے صدر بشار الاسد کے  مستقبل پر بات ہوئی یا نہیں۔ لیکن انھوں نے واضح کیا کہ صدر الاسد کو ’صحیح اقدامات کرنے چاہیے ‘ اور امن مذاکرات شامل ہونا چاہیے۔ امریکہ اور شامی حزبِ اختلاف کاموقف ایک جیسا ہے اور وہ چاہتے ہیں کہ صدر اسد اقتدار چھوڑ دیں لیکن شام کے صدر کے اتحادی روس کا کہنا ہے کہ اس بات کا فیصلہ شام کے عوام کریں گے۔ روسی وزیر دفاع مسٹر لاروف نے کہا کہ روس اور امریکہ شام کی حکومت اور حزبِ اختلاف پر زور دیں گے کہ وہ جینوا میں براہراست بات چیت کریں اور عبوری حکومت کے خدوخال کے بارے میں آگے بڑھیں۔ روس اور امریکہ نے کہا کہ وہ شام میں جنگ بندی پر عمل دارآمد پر زور دیں گے۔ شام میں 27 فروری سے جنگ بندی شروع ہوئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT