Friday , September 22 2017
Home / دنیا / شبہ کی بنیاد پر ایفل ٹاور دو گھنٹوں تک بند کردیا گیا

شبہ کی بنیاد پر ایفل ٹاور دو گھنٹوں تک بند کردیا گیا

پیرس ۔ 21 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) فرانس کے دارالخلافہ پیرس میں واقع ایفل ٹاور جو دنیا کے سات عجائبات میں شمارکیا جاتا ہے اور عالمی سطح پر ہر سیاح یہاں کا رخ ضرور کرتا ہے لیکن آج دنیا میں دہشت گردی کا ایسا دور دورہ ہے کہ اس سے کوئی بھی مقام محفوظ نہیں۔ کل جب ایفل ٹاور کو وزیٹرس کیلئے کھولے جانے کا وقت ہوا تو گارڈس نے دیکھا کہ وہاں پہلے سے ہی ایک آدمی موجود ہے جس نے یقیناً گارڈس کی نظر بچا کر یا تو وہیں شب بسری کی ہوگی یا پھر کسی نہ کسی ترکیب سے دراندازی کی ہوگی۔ اس صورتحال کو دیکھتے ہوئے ایفل ٹاور کو وزیٹرس کیلئے دو گھنٹوں تک بند کردیا گیا۔ تاہم پریس ڈپارٹمنٹ فار دی ٹورسٹ ایئریکشن نے بتایا کہ مقامی وقت 2.45 بجے ایفل کو سیاحوں کیلئے دوبارہ کھول دیا گیا۔ دریں اثناء ایک ذریعہ نے بھی اپنی شناخت مخفی رکھنے کی شرط پر بتایا کہ صبح کے اوقات میں نامعلوم شخص کی موجودگی کے بعد سیاحوں کیلئے صبح کے سیشن کیلئے ایفل کو بند کردیا گیا۔ ٹاور کو کوئی نقصان نہ پہنچے، اسی مقصد سے ہیلی کاپٹر کے ذریعہ بھی ٹاور کا معائنہ کیا گیا اور آتش فرو عملہ کو بھی طلب کرلیا گیا تھا لیکن دو گھنٹوں کی مسلسل تلاش کے بعد بھی وہاں کوئی بھی قابل اعتراض شئے نہیں مل سکی۔ ایک پولیس اہلکار نے بتایا کہ دراندازی کرنے والا شخص شاید مہم پسند ہوگا اور ایفل ٹاور سے بذریعہ پیراشوٹ چھلانگ لگانے کا ارادہ رکھتا ہوگا جو 324 میٹر بلند ہے کیونکہ اس شخص کی پیٹھ پر کوئی ایسی چیز لدی ہوئی تھی جو عام طور پر گلائڈرس استعمال کرتے ہیں۔ اس معاملہ کی مزید تحقیقات جاری ہے۔

TOPPOPULARRECENT