Tuesday , September 26 2017
Home / سیاسیات / شتروگھن کی ٹویٹ سے بی جے پی کی داخلی چپقلش آشکار

شتروگھن کی ٹویٹ سے بی جے پی کی داخلی چپقلش آشکار

پٹنہ، 24 مئی (سیاست ڈاٹ کام) بہار کے حلقہ پٹنہ صاحب سے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے رکن پارلیمنٹ اور سابق مرکزی وزیر شتروگھن سنہا کی طرف سے آج مسلسل ٹویٹ کئے جانے کے بعد پارٹی کے اندر کی چپقلش ایک بار پھر اجاگر ہو گئی ہے ۔  شتروگھن سنہا نے بی جے پی قانون ساز پارٹی کے لیڈر اور سابق نائب وزیر اعلیٰ سشیل کمار مودی کا نام لئے بغیر مسلسل کئی ٹویٹس میں کہاکہ ’’کوئی بھی اس پر یقین نہیں کر سکتا کہ پارٹی سے میری بے دخلی کی بات کہی گئی ہے ۔ بی جے پی کے محترم لیڈر بھولا بابو نے صحیح پوچھا ہے کہ انہوں نے کس حیثیت سے پارٹی سے میری بے دخلی کا مطالبہ کیا ہے ۔الزام لگانے سے پہلے انہیں خود اپنا محاسبہ کرکے دیکھ لینا چاہئے کہ ان کی شخصیت اور ان کا طریقہ کار کیسا ہے … یہ مناسب وقت ہے کہ وہ خود سبق لیں یا پارٹی کی اعلیٰ کمان انہیں سبق سکھائے ‘‘۔  بی جے پی ممبر پارلیمنٹ نے دوسری ٹویٹ میں کہا کہ ’’میرے لئے وہ اب بھی عزیز ہیں اور میں انہیں صرف مستقبل کے لئے نیک خواہشات دے سکتا ہوں۔ بھگوان اُن کو آشیرواد دے۔ جئے بہار، جئے ہند‘‘۔

TOPPOPULARRECENT