Tuesday , September 26 2017
Home / Top Stories / شجرکاری مہم میں حکام اور عوامی نمائندوں کی غیر سنجیدگی پر کے سی آر برہم

شجرکاری مہم میں حکام اور عوامی نمائندوں کی غیر سنجیدگی پر کے سی آر برہم

ہریتا ہارم کی کامیابی کیلئے ڈیویژن سطح پر نگرانی کی ہدایت، یوم آزادی کے موقع پر انعامات کا اعلان

حیدرآباد۔2اگسٹ (سیاست نیوز) چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے ہریتا ہرم میں غیر سنجیدگی پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ وہ پروگرام کو کامیاب بنانے کی ڈیویژن واری اساس پر نگرانی یقینی بنائیں اور ہریتا ہرم پراجکٹ میں سنجیدگی کے ساتھ حصہ لینے والے قائدین ‘ کارکنوں ‘ عوامی نمائندوں اور عہدیداروں کو یوم آزادی تقریب کے موقع پر ایوارڈ دینے کا اعلان کیا۔ روزنامہ سیاست کی جانب سے چند یوم قبل ہریتا ہرم کے سلسلہ میں شائع کردہ ایک رپورٹ کی اس بات سے تصدیق ہوتی ہے کہ خود حکومت پروگرام کی کارکردگی سے مطمئن نہیں ہے۔ سیاست میں شائع خبر میں اس بات کا تصویری ثبوت بھی پیش کیا گیا تھا کہ حکومت کی جانب سے ہریتا ہرم پروگرام کے دوران شجر کاری کے لئے تقسیم کئے گئے پودوں کو سڑک کے کنارہ پھینک دیا گیا تھا اور جس شاہراہ پر یہ پودے پھینکے گئے تھے اس شاہراہ سے ریاستی وزراء کا گذر ہوتا ہے۔ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے گذشتہ یوم جاری کردہ ہدایات میں اس بات کی جانب توجہ مبذول کروائی کہ شہر اور اضلاع میں بھی ہریتا ہرم پروگرام پر مؤثر عمل آوری نہ ہونے کی شکایات موصول ہو رہی ہیں۔ انہوں نے ہریتا ہرم پروگرام میں منتخبہ عوامی نمائندوں کی عدم دلچسپی پر بھی شدید رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ کسی بھی عوامی پروگرام کی کامیابی کیلئے یہ ضروری ہیکہ پروگرام کے متعلق جوش و خروش پیدا کیا جائے اور اس کی عمل آوری میں سنجیدگی و دلچسپی کا اظہار کیا جائے لیکن عوامی نمائندوں کی عدم دلچسپی اور غیر سنجیدگی باعث تشویش ہے۔ چیف منسٹر نے ہریتا ہرم پروگرام کو کامیاب بنانے کیلئے اس میں نئی جان ڈالنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ جو عوامی نمائندے اور شرکا ء ہریتا ہرم پروگرام میں مستعدی اور دلچسپی کا مظاہرہ کرتے ہوئے حصہ لیں گے اور اس پروگرام کو عوام سے جوڑنے کی کوشش کریں گے انہیں یوم آزادی کے موقع پر حکومت کی جانب سے ایوارڈ دیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT