Sunday , August 20 2017
Home / دنیا / شدید فضائی حملے ، شامی فوج کی پامیرا پر یلغار

شدید فضائی حملے ، شامی فوج کی پامیرا پر یلغار

بیروت ۔ 18 مارچ ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) روسی لڑاکا طیارے آج شام کی سرکاری فوج کی مدد کیلئے اور تاریخی قصبہ پامیرا پر سرکاری قبضہ بحال کرنے کیلئے فضاء میں دوبارہ پرواز کرنے لگے ۔ اس قصبہ پر دولت اسلامیہ نے قبضہ کرکے کئی عالمی شہرت یافتہ آثار قدیمہ کے مقامات تباہ کردیئے تھے ۔ کارکنوں نے جو شامی خانہ جنگی کی نگرانی کررہے ہیں ، اطلاع دی کہ پامیرا پر شدید فضائی حملے کئے گئے ۔ ماسکو میں وزارت دفاع روس کے ایک عہدیدار نے توثیق کی کہ روسی لڑاکا طیارے شام کی فضاء میںپرواز کررہے ہیں تاکہ شام کی یلغار اور قصبہ پامیرا پر اس کا قبضہ بحال کرنے کی کوشش میں مدد کرسکیں حالانکہ جاریہ ہفتہ روس نے اپنی فوج شام سے واپس طلب کرلی ہے لیکن صدر روس ولادیمیر پوٹن نے آج حکم دیا کہ روسی طیاروں اور فوج کی جزوی دستبرداری جاریہ ہفتہ ہوگی ۔ جنیوا امن مذاکرات کی مدد کیلئے جو سوئٹزرلینڈ میں حکومت شام اور مغرب کی حمایت یافتہ اپوزیشن کے درمیان اقوام متحدہ کی ثالثی سے جاری ہیں ۔

روس اس میں مدد کرنا چاہتا ہے تاکہ پانچ سال سے جاری خانہ جنگی ختم ہوسکے ۔ آج جنگ بندی کا پانچواں دن تھا ، اگر شام کی فوج اور اُس کے حلیف تاریخی قصبہ جو وسطی صوبہ حمص میں واقع ہے اپنا قبضہ بحال کرنے میں کامیاب ہوجائیں تو یہ شام کی ایک بڑی فتح ہوگی ۔ لڑاکا طیاروں نے 12 سے زیادہ فضائی حملے آج صبح کئے ۔ دو کارکنوں کے گروپس کے بموجب شامی رسدگاہ برائے انسانی حقوق نے اطلاع دی ہے کہ فوجی آہستہ آہستہ قصبہ پامیرا کی سمت پیشرفت کررہے ہیں ۔ دونوں فریقین جنگ بندی پر ہنوز قائم ہیں۔ دونوں فریقین کی مہلوکین کی تعداد کا ہنوز علم نہیں ہوسکا ۔ شام کی فوج اور اُس کے حلیف گزشتہ ہفتہ سے اب تک پامیرا کے قریب بلند ترین مقام ہل ۔9 ہنڈریڈ پر قبضہ کرچکے ہیں۔ پامیرا گزشتہ سال سے دولت اسلامیہ کے قبضہ میں ہے ۔

TOPPOPULARRECENT