Thursday , August 17 2017
Home / دنیا / شراب لیجانے سے انکار، مسلمان ٹرک ڈرائیورس نے مقدمہ جیت لیا

شراب لیجانے سے انکار، مسلمان ٹرک ڈرائیورس نے مقدمہ جیت لیا

شکاگو 28 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ کی ایک جیوری نے دو مسلمان ڈرائیورس کو صرف اس لئے ملازمت سے برخاست کرنے پر کہ انھوں نے بیئر (ایک قسم کی شراب) کی ڈیلیوری کرنے سے انکار کردیا تھا، معاوضہ کے طور پر 240,000 امریکی ڈالرس کی خطیر رقم ادا کرنے کا فیصلہ صادر کیا ہے جو دراصل مذہبی طور پر امتیازی رویہ اختیار کرنے کا معاملہ تھا۔ یو ایس ڈسٹرکٹ کورٹ کے جج جیمس شڈید نے محمد عباس اور عبدالکریم حسن کے حق میں فیصلہ سنایا جب اسٹار ٹرانسپورٹ نے جاریہ سال کے اوائل میں اپنی کوتاہی کا اعتراف کیا۔ عباس اور حسن دونوں ہی صومالی نژاد امریکی مسلمان ہیں جن کی نمائندگی فیڈرل ایکوئل ایمپلائمنٹ اپارچونٹی کمیشن نے کیا تھا اور اوباما انتظامیہ کی جانب سے کمیشن نے یہ کیس جیت لیا۔ عباس اور حسن نے بیئر کی منتقلی کرنے سے یہ کہہ کر انکار کردیا تھا کہ اُن کا مذہب اُنھیں شراب لانے، لیجانے، استعمال کرنے یا اُس کا کاروبار کرنے کی اجازت نہیں دیتا۔ حیرت انگیز بات یہ ہے کہ مقدمہ کی سماعت کا آغاز 19 اکٹوبر سے ہوا تھا اور جیوری نے دوسرے ہی دن صرف 45 منٹوں کے اندر باہمی تبادلہ خیال کے بعد ٹرک ڈرائیورس کے حق میں اپنا فیصلہ سنادیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT