Thursday , August 24 2017
Home / سیاسیات / شردپوار کی آج مختلف قائدین سے ملاقات

شردپوار کی آج مختلف قائدین سے ملاقات

Sharad Pawar addressing Sarva Bhashik Shramjivi Sammelan at Bandra East Puneet Chandhok DNA

نئی سیاسی صف بندی کے امکانات ، ممتابنرجی کا کجریوال سے تبادلہ خیال
نئی دہلی ۔ /11 اگست (سیاست ڈاٹ کام) این سی پی سربراہ شردپوار کل چیف منسٹر مغربی بنگال ممتا بنرجی ، جنتادل (یو) سربراہ شردیادو ، سماج وادی پارٹی صدر ملائم سنگھ یادو اور چیف منسٹر دہلی اروند کجریوال سے ملاقات کریں گے ۔ سیاسی حلقوں میں اسے ایک نئی تبدیلی تصور کیا جارہا ہے ۔ شردپوار نے اس بارے میں پوچھے جانے پر کہا کہ کل وہ تمام قائدین سے چائے پر ملاقات کریں گے ۔ ممتابنرجی آج کولکتہ سے یہاں پہونچی ہیں ۔ شردپوار نے آج ترنمول کانگریس سربراہ سے پارلیمنٹ ہاؤز میں واقع پارٹی دفتر میں ممتابنرجی سے ملاقات کی تھی ۔ اس وقت پارٹی رفقاء پرافل پٹیل اور طارق انور بھی ان کے ہمراہ تھے ۔ ممتابنرجی نے کجریوال سے ڈنر میں ملاقات کے بعد کہا کہ اگر ہم مل کر کام کریں تو ہماری ریاستیں مستحکم ہوں گی اور وفاقی ڈھانچہ کو بھی مضبوط بنانے میں مدد ملے گی ۔ انہوں نے کہا کہ کل ہم شردپوار کی رہائش گاہ پر ملاقات کرنے والے ہیں۔

 

توقع ہے کہ کجریوال کے علاوہ دیگر پارٹی قائدین بھی شریک ہوں گے ۔ ممتابنرجی نے ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ کجریوال سے مختلف امور بشمول سیاسی مسائل پر بات چیت ہوئی ۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر دہلی نے انہیں /22 ستمبر کو منعقد شدنی سمینار میں شرکت کی دعوت دی ہے ۔ کواپریٹیو وفاقیت پر اس سمینار میں دیگر چیف منسٹرس کو بھی مدعو کیا جارہا ہے ۔ ممتابنرجی نے کہا کہ جس وقت دہلی میں انتخابات ہوئے تھے اور کجریوال نے بھاری اکثریت سے کامیابی حاصل کی تب انہوں نے مبارکباد دی تھی ۔ آج شخصی طور پر ملاقات کرتے ہوئے اس کامیابی کیلئے انہوں نے مبارکباد دی ہے ۔ جب ان سے پوچھا گیا کہ کیا ترنمول کانگریس عام آدمی پارٹی نظریاتی کی تائید کرتی ہے ۔ ممتا بنرجی نے کہا ہر پارٹی کا اپنا نظریہ ہوتا ہے اور ہر ایک کا کام کرنے کا بھی اپنا انداز ہوتا ہے ۔ عام آدمی پارٹی کے ساتھ اتحاد کے بارے میں پوچھے جانے پر انہوں نے کہا کہ ہم اچھی توقعات وابستہ کرسکتے ہیں ۔ اروند کجریوال نے کہا کہ وہ ممتابنرجی کے جذبہ خیرسگالی سے بے حد متاثر ہوئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں ملکر کئی لڑائیاں لڑنی ہیں ۔ ممتا بنرجی مجھ سے کافی سینئر ہیں اور انہیں بہت کچھ سیکھنے کو ملے گا ۔ ان کی پارٹی بھی بنگال میں غریبوں کے کاز کی وکالت کرتی ہے ۔ دہلی میں ہم نے بھی عام آدمی کو درپیش مسائل اٹھائے ہیں ۔ اس طرح بعض ایسے موضوعات ہیں جن پر ہم ملکر کام کرسکتے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT