Sunday , August 20 2017
Home / Top Stories / شرعی قوانین کے تحفظ کیلئے مسلم پرسنل لاء بورڈ متحرک ہوجائے

شرعی قوانین کے تحفظ کیلئے مسلم پرسنل لاء بورڈ متحرک ہوجائے

سیکولر قائدین کا اجلاس طلب کرنے کی تجویز، جناب زاہدعلی خاں سے وزیر اقلیتی بہبود بہار کی ملاقات
حیدرآباد۔11اکٹوبر(سیاست نیوز) حکومت بہار کے ریاستی وزیر اقلیتی بہبود ڈاکٹر عبدالغفور نے آج دفتر روزنامہ سیاست پہنچ کر ایڈیٹر سیاست جناب زاہد علی خان اور منیجنگ ایڈیٹر جناب ظہیر الدین علی خان سے ملاقات کرتے ہوئے مسلم مسائل اور ملک کے سیاسی حالات پر تبادلہ ٔ خیال کیا۔ اس موقع پر انہوں نے ملک میں مسلمانوں کو درپیش مسائل کے حل کے لئے سنجیدہ کوششوں کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ہندستان میں آج مسلمان جن حالات کا سامنا کر رہے ہیں ان حالات میں جذباتیت کا شکار ہونے کے بجائے ہوش سے کام لیں اور ایسے عناصر کی سرکوبی کو یقینی بنائیں جو ہندو فرقہ پرستی کو غذاء فراہم کرتے ہیں۔ ریاستی وزیر اقلیتی بہبود بہار نے کہا کہ ملک میں شرعی قوانین کے تحفظ کیلئے ضروری ہے کہ مسلم پرسنل لاء بورڈ فوری حرکت میں آتے ہوئے تمام سیکولر سیاسی جماعتوں کے سربراہان کو مدعو کرتے ہوئے دہلی میں اجلاس منعقد کرے تاکہ تمام سیکولر جماعتوں کو متحد کرتے ہوئے ان ناپاک عزائم کو پورا ہونے سے روکا جا سکے۔ڈاکٹر عبدالغفور نے بتایا کہ مسلم معاشرے کی مجموعی ترقی کیلئے ضروری ہے کہ ان کی تعلیمی ترقی کو اہمیت دی جائے تاکہ مسلم نوجوان تعلیمی میدان میں ترقی کرتے ہوئے آگے بڑھیں۔شریعت میں مداخلت کی کوششوں کی مذمت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ملک میں برسراقتدار فرقہ پرست قوتیں اپنے مقاصد کی تکمیل کیلئے ملک کے عوام کے درمیان منافرت پھیلا رہے ہیں۔ انہوں نے ایڈیٹر سیاست سے ملاقات کے دوران ادارۂ سیاست کی جانب سے انجام دی جانے والی خدمات کی ستائش کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کے ادارے ملت کی رہبری میں کلیدی کردار ادا کرتے ہیں کیونکہ جو ادارے ملت کی مثبت ترقی کی فکر میں عملی اقدامات کرتے ہیں وہ ادارے ہی ملت کی تعمیر کو یقینی بنا سکتے ہیں۔ ڈاکٹر عبدالغفور نے کہا کہ ریاست بہار میں عوام کی بنیادی ترقی کے لئے اقدامات کی منصوبہ بندی کی جا رہی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ وہ گذشتہ تین یوم سے شہر حیدرآباد میں ہیں اور پرانے شہر کے کئی علاقوں کا دورہ کرتے ہوئے حالات سے آگہی حاصل کر چکے ہیں۔ اس دورہ کے دوران انہوں نے فلک نما میں چلائے جارہے مولانا آزاد ماڈل اسکول کا بھی معائنہ کیا۔ انہوں نے جناب زاہد علی خان سے بات چیت کے دوران اردو کو درپیش چیلنجس اور ان سے نمٹنے کے اقدامات کے متعلق تجاویز پیش کرتے ہوئے کہا کہ اردو زبان کی بقاء کیلئے پرائمری اسکولوں میں اردو تعلیم کے نظم کو برقرار رکھا جانا ناگزیر ہے۔ جناب ظہیر الدین علی خان منیجنگ ایڈیٹر روزنامہ سیاست نے انہیں ریاستی حکومت کی جانب سے مسلمانوں کی تعلیمی ترقی اور ان کی معاشی پسماندگی کو دور کرنے کیلئے چلائی جانے والی اسکیمات کی صورتحال سے واقف کروایا۔ ڈاکٹر عبدالغفور ریاستی وزیر اقلیتی بہبود بہار نے ادارۂ سیاست کی جانب سے بہار سے تعلق رکھنے والے طلبہ کو انجینئرنگ میں داخلوں کے دوران کی جانے والی رہبری کی بھی سراہنا کی اور کہا کہ بہار سے تعلق رکھنے والے طلبہ ملک بھر کی بیشتر ریاستوں میں اعلی تعلیم حاصل کر رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT