Friday , August 18 2017
Home / کھیل کی خبریں / شر جیل خان کو چھ ماہ کی سزا کا سامنا

شر جیل خان کو چھ ماہ کی سزا کا سامنا

لاہور ۔27 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) پی ایس ایل اسپاٹ فکسنگ مقدمہ میں پاکستانی کرکٹ ٹیم کے اوپنر شرجیل خان کو چھ ماہ کی پابندی کا سامنا ہے۔ ان کے وکیل شیغان اعجاز نے دعویٰ کیا کہ نوجوان کھلاڑی پر تا حیات کرکٹ کھیلنے کی پابندی خارج از امکان ہے۔لاہور میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے شیغان اعجاز نے کہا کہ تین رکنی اینٹی کرپشن ٹر بیونل آئندہ ماہ اپنے فیصلے میں شرجیل خان کو بے گناہ قرار دے گا اور اگر شرجیل خان کو سزا ہو ئی تو ان پر زیادہ سے زیادہ چھ ماہ کی پابندی عائد ہو گی۔ شیغان اعجاز کے مطابق انہوں نے پی سی بی کے تین رکنی اینٹی کرپشن ٹربیونل کے سامنے شرجیل خان کا مقدمہ بہترین طریقے سے لڑا ہے اور ٹربیونل ان کے موکل کو سخت سزا نہیں دے گا۔نیز برطانوی نیشنل کرائم ایجنسی کے آپریشنز منیجر اینڈریو ایفگریو ا سکائپ پر اپنا بیان ریکارڈ کروا چکے ہیں لیکن وہ شرجیل خان کے خلاف ٹھوس ثبوت نہیں دے سکے۔ واضح رہے کہ شرجیل خان کیخلاف مقدمہ کی سماعت مکمل ہو گئی ہے۔ فریقین کی جانب سے حتمی تحریری جواب 29 جولائی تک جمع کرادیئے جائیں گے جس کے بعد ٹر بیونل 30 دنوں کے اندر اپنا فیصلہ سنائے گا۔ شیغان اعجاز نے کہا کہ پی سی بی نے شرجیل خان پر اسپاٹ فکسنگ کے ساتھ مجموعی طور پر پانچ الزامات لگائے تھے اور انہوں نے اپنے موکل کے دفاع کی بھرپور کوشش کی ہے اور کوئی بھی الزام ثابت نہیں ہو سکا ہے۔ چھ ماہ کی پابندی کی سزا کا خدشہ بھی اس لئے ہے کہ شرجیل کو جو سٹہ باز نے پیشکش کی تھی وہ بروقت بورڈ کو آگاہ نہیں کر سکے تھے۔ یاد رہے پاکستانی ٹیم کے جارحانہ بائیں ہاتھ کے بیٹسمین شرجیل خان فکسنگ کے معاملے میں پہلے ہی عبوری معطلی کا شکار ہیں کیوں کہ پی سی بی نے پاکستان سوپر لیگ کے دوسرے ایڈیشن کے آغاز پر ہی یہ فیصلہ لیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT