Thursday , March 30 2017
Home / ہندوستان / ششی کلا کو سزاء سپریم کورٹ میں برقرار۔ سلسلہ وار واقعات

ششی کلا کو سزاء سپریم کورٹ میں برقرار۔ سلسلہ وار واقعات

نئی دہلی۔/14فبروری، ( سیاست ڈاٹ کام) غیر متناسب اثاثہ جات کے اس کیس کے حسب ذیل سلسلہ وار واقعات ہیں جس میں سپریم کورٹ نے آج آل انڈیا انا ڈی ایم کے جنرل سکریٹری وی کے ششی کلا کو مجرم قرار دیا۔ یہ وہی کیس ہے جس میں آنجہانی سی ایم جیہ للیتا بھی ملزمہ تھیں۔
٭  1996:…سبرامنیم سوامی جو اسوقت جنتا پارٹی سربراہ تھے ، انہوں نے جیہ للیتا کے خلاف ایک کیس دائر کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ1991سے 1996 تک چیف منسٹر ٹاملناڈو کی حیثیت سے اپنی میعاد کے دوران انہوں نے اپنے معروف ذرائع آمدنی سے غیر متناسب 66.65 کروڑ روپئے قدر کی املاک جمع کئے۔
٭  7 ڈسمبر 1996:…  جیہ للیتا کو گرفتار کیا گیا۔ کئی الزامات عائد ہوئے جن میں غیر متناسب اثاثہ جات اکٹھا کرنا شامل ہے۔  ٭ 1997:… جیہ للیتا اور تین دیگر کے خلاف اپنی معروف آمدنی سے غیرمتناسب اثاثہ جات رکھنے کے خلاف چینائی کی سیشنس کورٹ میں مقدمہ کی شروعات۔ ٭ 4 جون 1997:… ان ملزمین کے خلاف تعزیرات ہند کی دفعات 120-B،13(2)کے تحت فرد جرم عائد کیا گیا جس میں قانون انسداد بدعنوانی 1988کے دفعہ 13(1)(e)کو بھی شامل کیا گیا۔
٭ یکم اکٹوبر1997: … مدراس ہائی کورٹ نے جیہ للیتا کی تین عرضیوں کو خارج کردیا جن میں وہ بھی شامل ہیں جس کے ذریعہ ان پر مقدمہ چلانے کیلئے اسوقت کی گورنر ایم فاطمہ بی بی کی جانب سے منظورہ اجازت کے جواز کو چیلنج کیا گیا تھا۔ٹرائیل آگے بڑھی۔ اگسٹ 2000 تک استغاثہ کے 250 گواہوں پر جرح ہوئی اور صرف 10باقی رہ گئے۔مئی 2001 کے اسمبلی انتخابات میں آل انڈیا انا ڈی ایم کے کو قطعی اکثریت حاصل ہوئی اور جیہ للیتا چیف منسٹر بن گئیں۔ تانسی( ٹاملناڈو اسمال انڈسٹریز کارپوریشن ) کیس میں اکٹوبر 2000 میں جیہ للیتا کی سزا دہی کے سبب ان کے بحیثیت چیف منسٹر تقرر کے جواز کو چیلنج کیا گیا۔ سپریم کورٹ نے یہ تقرر کالعدم کردیا۔
٭ 21سپٹمبر 2001 :… جیہ للیتا کی وزارت اعلیٰ موقوف ہوگئی۔ ان کی سزاء دہی کو کالعدم کئے جانے کے بعد جیہ للیتا 21فبروری 2002 کو انڈیپٹی حلقہ سے ضمنی چناؤ میں اسمبلی کیلئے منتخب ہوئیں اور دوبارہ چیف منسٹر کی حیثیت سے حلف لیا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT