Sunday , August 20 2017
Home / Top Stories / شمالی کوریا نے سیٹلائیٹ کو مدار میں داخل کردیا

شمالی کوریا نے سیٹلائیٹ کو مدار میں داخل کردیا

راکٹ لانچنگ پر عالمی برادری کا شدیدردعمل ، سلامتی کونسل کا ہنگامی اجلاس
میؤل ۔ /7 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) شمالی کوریا نے آج راکٹ لانچ کے ذریعہ سیٹلائیٹ کو کامیابی کے ساتھ مدار میں داغنے کا دعویٰ کیا ۔ اس کی دنیا بھر میں مذمت کی گئی اور امریکہ پر حملہ کے لئے ہتھیاروں کو پہنچانے کا سسٹم سے مربوط بالسٹک میزائیل تجربہ تصور کیا جارہا ہے ۔ آج کی راکٹ لانچنگ اقوام متحدہ کی بیشتر قرارادوں کی خلاف ورزی ہے جبکہ بین الاقوامی برادری ہیونگ یانگ کو ایک ماہ قبل نیوکلیر تجربہ کی پاداش میں تحدیدات کے بارے میں ابھی غور و خوص میں مصروف ہے ۔ راکٹ کے کامیابی کے ساتھ مدار میں پہنچ جانے کی فوری طورپر بیرونی توثیق نہ ہوسکی لیکن امریکی ڈیفنس عہدیدار نے کہا ایسا لگتا ہے کہ لانچ وہیکل خلا میں پہنچ چکی ہے ۔ جنوبی کوریا کی یونیاپ خبر رساں ایجنسی نے یہ غیر مصدقہ رپورٹ دی ہے کہ دوسرے مرحلہ میں خرابی پیدا ہوگئی ۔ سرکاری ٹیلی ویژن چیانل پر خصوصی نشریہ میں خاتون شمالی کوریائی اناؤنسٹر نے کہا کہ لیڈر کم جانگ ان کی شخصی ہدایات پر راکٹ لانچ کیا گیا ۔ اسے زمین کا تجزیہ کرنے والے سیٹلائیٹ کورنگ میونگ 4 کو کامیابی کے ساتھ مدار میں داخل کردیا گیا ہے ۔

اناؤنسر نے کہا کہ یہ لانچنگ شمالی کوریا کے پرامن اور آزاد ملک کی حیثیت سے جائز حق ہے اور انہوں نے یہ بھی کہا کہ ہماری قومی دفاعی صلاحیت میں یہ ایک اہم سنگ میل ہے ۔ شمالی کوریا کے سائنسدان مستقبل میں مزید سیٹلائیٹ لانچنگ کیلئے کام کریں گے ۔ دنیا کے مختلف ممالک نے شمالی کوریا کے اس کارروائی پر تنقید کی امریکہ نے اسے عدم استحکام سے دوچار کرنے اور اشتعال انگیزی کی کوشش قرار دیا جبکہ وزیراعظم جاپان شائنزوابے نے اسے ناقابل برداشت قرار دیا ۔ نیویارک میں سفارتکاروں نے کہا کہ اقوام متحدہ سلامتی کونسل کا ہنگامی اجلاس منعقد کیا جارہا ہے ۔ جنرل کوریا کے صدر پارک گیون ہائی نے کہا کہ کونسل کو فوری کارروائی کرتے ہوئے سزا یقینی بنائی ہوگی ۔ انہوں نے اسے عالمی امن اور سلامتی کے لئے سنگین چیالنج قرار دیا ۔ یہ راکٹ جس میں زمینی تجزیہ کی صلاحیت کا حامل سیٹلائیٹ موجود تھا ، ہیونگ یانگ وقت کے مطابق تقریباً 9.00 بجے صبح داغا گیا ۔ جنوبی کوریا کی وزارت دفاع نے یہ بات بتائی جو حالات پر نظر رکھے ہوئے تھی ۔

 

شمالی کوریا کے میزائل تجربہ کو اشتعال انگیزقرار دیتے ہوئے عالم گیر سطح پر مذمت
واشنگٹن ۔7فبروری( سیاست ڈاٹ کام ) امریکہ نے آج شمالی کوریا کی جانب سے طویل فاصلاتی راکٹ کے ذریعہ میزائل تجربہ کو کامیاب ہائیڈروجن بم تجربہ کے بعد ایک اور اشتعال انگیزی قرار دیتے ہوئے اس کی سختی سے مذمت کی ۔ وزیر خارجہ امریکہ جان کیری نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ شمالی کوریا کے اس تجربہ کی شدید مذمت کی جاتی ہے ۔ ایک ماہ کے اندر شمالی کوریا کی یہ دوسری اشتعال انگیزی ہے ۔ اقوام متحدہ سے موصولہ اطلاع کے بموجب اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کا ایک ہنگامی اجلاس نیویارک میں منعقد کیا گیا اور جنوبی کوریا اور کونسل کے ارکان سے درخواست کی گئی ہے کہ سلامتی کونسل کی قراردادوں کی شدت سے مذمت کریں ‘ جب کہ معتمد عمومی بانکی مون نے شمالی کوریا سے خواہش کی کہ وہ اپنی اشتعال انگیز کارروائیاں ترک کردے اور بین الاقوامی ذمہ داریوں کی تکمیل کرے ۔ چین نے شمالی کوریا کے راکٹ تجربہ پر اظہار افسوس کیا ہے ۔ پیرس سے موصولہ اطلاع کے بموجب فرانس نے بھی اس تجربہ کو تیز رفتار اور سخت ردعمل قرار دیتے ہوئے اس کی سختی سے مذمت کی ۔ ٹوکیو سے موصولہ اطلاع کے بموجب وزیراعظم جاپان شن زوایب نے شمالی کوریا کے میزائل تجربہ کو قطعی ناقابل قبول قرار دیتے ہوئے اس کی مذمت کی اور کہا کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کی خلاف ورزی کو قطعی برداشت نہیں کیا جائے گا ۔

TOPPOPULARRECENT