Friday , August 18 2017
Home / ہندوستان / شمال مغربی دہلی میں فرقہ وارانہ تصادم، 7 افراد زخمی

شمال مغربی دہلی میں فرقہ وارانہ تصادم، 7 افراد زخمی

نئی دہلی ۔ 9 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) دو فرقوں کے درمیان جھڑپ کے دوران کم از کم 7 افراد زخمی ہوگئے۔ اشرار نے سنگباری بھی کی۔ ایک جھڑپ شمال مغربی دہلی کے علاقہ بھلسواڈیری کے علاقہ کی ایک عبادتگاہ میں شام کی عبادت کیلئے لاؤڈ اسپیکرس کے استعمال کے سلسلہ میں ہوئی۔ بعدازاں پولیس نے صورتحال پر قابو پالیا۔ فساد برپا کرنے کا ایک مقدمہ درج کرلیا گیا لیکن تاحال کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی۔ ایک سینئر عہدیدار نے کہاکہ تقریباً 12 پولیس ملازمین اس علاقہ میں غیرمعینہ مدت کیلئے تعینات کردیئے گئے ہیں تاکہ نظم و قانون کی صورتحال کی نگرانی کریں۔ پولیس کے بموجب کل شام بی بلاک بھلسواڈیری کے چند مقامی افراد عبادت کررہے تھے۔ چند نوجوانوں نے ان کا دعویٰ ہیکہ وہ دوسرے فرقہ کے تھے۔ موٹر سائیکلوں پر وہاں پہنچے اور ان کی عبادت کے اوقات اور لاؤڈ اسپیکرس کے استعمال پر زبانی تکرار ہوگئی۔ جلد ہی ہجوم میں شامل بعض اشرار نے سنگباری کی جس کے نتیجہ میں انتشار پیدا ہوگیا اور پولیس عہدیداروں کی ٹیم فوری مقام واردات پر پہنچ گئی۔ اس وقت تک اشرار فرار ہوچکے تھے۔ پولیس نے بعدازاں دونوں کے افراد کو سمجھایا جو سنگباری کا الزام ایک دوسرے پر عائد کررہے تھے۔ ایسا ہی ایک تنازعہ اسی علاقہ میں چند ہفتہ قبل ہی پیدا ہوا تھا تاہم امن کمیٹی کے تعاون سے اس کی یکسوئی کرلی گئی تھی۔ پولیس عہدیداروں نے ان دعوؤں کو مسترد کردیا کہ ایک فرقہ کے دوسرے فرقہ کے ارکان کو تلواروں، چاقوؤں اور بندوقوں سے مسلح ہوکر دھمکیاں دی تھیں۔ عہدیدار نے کہا کہ مبینہ ہتھیار موقع واردات پر دستیاب نہیں ہوئے۔ سی سی ٹی وی کی جھلکیاں حاصل کی جارہی ہے تاکہ اشرار کی شناخت یقینی بنائی جاسکے جنہوں تشدد کاآغاز کیا تھا۔ پولیس عہدیدار نے اس کا انکشاف کیا۔

TOPPOPULARRECENT