Wednesday , August 23 2017
Home / شہر کی خبریں / شمس آباد گرلز ہاسٹل میں منچلے نوجوانوں کی خلل اندازی

شمس آباد گرلز ہاسٹل میں منچلے نوجوانوں کی خلل اندازی

لڑکیوں کا شوروغل، پولیس کی آمد پر فرار، سرپنچ کا دورہ، وارڈن غائب
شمس آباد ۔ 22 اگست (سیاست نیوز) شمس آباد میں واقع گرلز ہاسٹل میں کل رات 10 بجے کے قریب چند نوجوان داخل ہونے کی کوشش کی۔ لڑکیوں کی شوروغل پر نوجوان فرار ہوگئے۔ پولیس کو طلب کرلیا گیا تھا۔ اس وقت ہاسٹل میں وارڈن بھی موجود نہیں تھی۔ تمام حالات کی اطلاع شمس آباد سرپنچ راجاملا سدشیور کو ملی تو انہوں نے اچانک دورہ کیا۔ تب بھی ہاسٹل میں وارڈن موجود نہیں تھی۔ لڑکیوں نے بتایا کہ ہر روز رات کے اوقات گیٹ کو ڈھکیلا جاتا ہے اور چیخ و پکار کی جاتی ہے۔ اس کی اطلاع وارڈن کو دینے کے باوجود وہ نہیں پہنچتی ہیں۔ وارڈن صرف ہفتہ میں ایک مرتبہ آ کر اناج دیکر چلی جاتی ہے۔ لڑکیوں کے مطابق انہیں روزانہ کچھ مقدار میں ہی کھانا دیا جاتا ہے۔ دوسری بار طلب کرنے پر دینے سے انکار کردیتے ہیں۔ روزانہ تقریباً 13 کیلو چاول دو وقت میں پکانا چاہئے لیکن لڑکیوں کے مطابق صرف دو وقت میں صرف پانچ کیلو چاول ہی پکایا جاتا ہے۔ انہیں کسی بھی قسم کی سہولت فراہم نہیں کی جارہی ہے۔ لائٹس کئی دن سے بند پڑے ہیں۔ ٹیوب لائیٹس تبدیل نہیں کئے گئے اور انہیں ڈرایا اور دھمکایا جاتا ہے۔ راچاملاسدیشور نے کہا کہ ان تمام حالات کی رپورٹ کو وہ اعلیٰ عہدیداروں کو دیکر حالات کو بہتر بنائیں گے۔ انہوں نے ہاسٹل وارڈن سے فون پر بات کی تو وارڈن سوالات کے جوابات دینے کے بجائے فون ہی کاٹ دیا۔ سرپنچ نے فوراً ٹیوب لائیٹس کی تبدیلی کی ہدایت دی اور طلباء سے کہا کہ اگر انہیں کوئی بھی ڈرائے یا دھمکائے تو وہ فوراً پنچایت آفس آ کر اس کی اطلاع دی ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ سرپنچ نے کہا کہ طلباء کو غذا کم مقدار میں دی جارہی ہے اور ان کے ساتھ جانوروں جیسا سلوک کیا جارہا ہے۔ چند سال قبل بھی اسی ہاسٹل میں تقریباً 300 طلباء رہتے تھے آج ان کی تعداد گھٹ گئی، اس میں سے بھی 12 طلبہ جاریہ سال نکل گئے۔ ہاسٹل کی کارکردگی کا اندازہ لگایا جاسکتا ہے۔ اس موقع پر ای او شیام سندر، سریکانت، نریش، ریپا، بھارتی گرام پنچایت ممبرس کے علاوہ دیگر موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT