Sunday , July 23 2017
Home / اضلاع کی خبریں / شوق، موت کی نیند سلا رہا ہے

شوق، موت کی نیند سلا رہا ہے

ڈرگ ‘ سیلفی اور تیز رفتاری کی تباہی سے نئی نسل کو بچانا ضروری : محمد شکیل عامر
نرمل ۔ 9 ؍ جولائی(جلیل ازہر کی رپورٹ) نوجوانوں کی تیز رفتاری اور حادثات کی اموات کے حالات کا ہر گوشہ عوام کی نگاہ میں ہے ۔ وہ دنیا کے سامنے آئینہ ہے ذرا سوچئے کہ آنے والے نسلیں آج کے ان تباہ کن حالات اور جوانی میں موت کے آغوش میں چلی جا رہی ہے ۔ نسل کے بارے میں کیا سوچیں گے ۔ ان خیالات کا اظہار جناب محمد شکیل عامر رکن اسمبلی بودھن نے ’’سیاست‘‘ نیوز جلیل ازہر سے فون پر بات چیت کرتے ہوئے بتایا ۔ واضح رہے کہ گذشتہ ہفتہ نرمل کے مشہور آبشار کنٹالہ میں سیلفی کے شوق نے دو نوجوانوں کو موت کی آغوش میں لے لیا جن کا تعلق ضلع نظام آباد سے ہے ۔ اس طرح کے واقعات کی ایک تاریخ رقم ہو رہی ہے ۔ آئے دن سیلفی کے شوق نے کئی نوجوانوں کو موت کی نیند سلا دی ۔ محمد شکیل عامر نے بتایاکہ نسل نو قوم کا اثاثہ ہی نہیں اپنے والدین کی امید ہوتے ہیں ۔ ماں باپ ان کی پرورش میں کوئی کمی نہیں رکھتے ہوئے ان کی ہر خواہش کو پورا کرتے ہیں ۔ جانے والے چلے جاتے ہیں لیکن ان کے بعد والدین پر کیا گذرتی ہے اس کا محاسبہ کرنا ہر نوجوان کا فرض ہے ۔ آج کے اس ترقیاتی دور نے نئی نسل کو تباہی کے دہانے پر لاکھڑا کر ردیا ۔ تیز رفتاری کسی بھی شعبہ میں تباہی کا باعث بن رہی ہے ۔ ایک طرف سیلفی کے شوق سے اموات دوسری طرف سیکل موٹروں کی رفتار سے کئی نئی نویلی دلہنوں کی مانگ کا سیندور اجڑ گیا ۔ ان گنت دلہنیں بیوہ ہوگئی کتنی ہی ماوں کی گود اجڑ گئی جانے کتنے ایسے باپ ہی جن کے کاندھے جوان بیٹوں کے جنازے کے بوجھ سے ٹوٹ گئے لیکن مسائل ختم ہوتے دکھائی نہیں دے رہے ہیں ۔ اب ایک نیا مسئلہ ڈرگ مافیا کا سرگرم عمل ہوگیا ہے ۔ اس اطلاع کے ساتھ ہی وزیر اعلیٰ چندرشیکھرراؤ نے منشیات کی تجارت کرنے والوں کے خلاف سخت گیر اقدامات کرنے محکمہ اکسائز کو ہدایات جاری کر دی ہیں ۔ وزیر اعلی نسل نو کے شاندار مستقبل کے خواہاں ہیں تاہم اسکولس اور کالجس کے طلبا و طالبات کو ڈرگس اور منشیات کا عادی بنانے کے لئے جو منظم ناپاک سازش نظر آ رہی ہے اس کے خاتمہ کے لئے حکومت کمر بستہ ہوگئی ہے ۔ لیکن سرپرستوں پر بڑی ذمہ داری عائد ہوتی یکہ وہ اپنے بچوں پر خصوصی توجہ دیں اس لعنت کو روکنے میں ہر علاقہ کی تنظیمیں اور دانشوروں کو ملکر قدم اٹھانا ہوگا ۔ ڈرگ مافیا کو کچلنے کے لئے عوامی تعاون ناگزیر ہے ورنہ نسل نو بھٹک جائے گی ۔ انہوں نے نوجوانوں سے بھی اپیل کی کہ وہ اس سنگین حالات میں ایسی چیزوں سے احتیاط کریں ۔ اپنے والدین کی خواہشات اور ان کے خوابوں کی تکمیل کے لئے جدوجہد کرتے ہوئے تعلیمی میدان میں آگے آئیں ساتھ ہی انہوں نے سماج کے تمام ذمہ داروں سے خواہش کی کہ وہ ڈرگ نسل کے لئے ناسور ہے اس کی روک تھام کے لئے سرپرستوں اور ذمہ داروں کو چاہئے کہ اسکولس اور کالجس پر نظر رکھیں ۔ جناب شکیل عامر نے کہاکہ شہر میں ان واقعات کی اطلاعات کے ساتھ ہی وزیر اعلیٰ نے گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے عہدیداروں کو خصوصی ہدایات جاری کر دی ہیں ۔ آخر میں شکیل عامر نے کہا کے دل جو آرزوں کا قبرستان ہے اس پر کنٹرول کرنا ہماری ذمہ داری ہے کیوں کے ہر نوجوان سے خاندان کے کئی لوگ جڑے ہوئے ہوتے ہیں نفس پر قابو پالو ہر کام آسان ہوجائیگا ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT