Thursday , August 24 2017
Home / اضلاع کی خبریں / شہری ، شرپسندوں کے خلاف خاموشی توڑیں

شہری ، شرپسندوں کے خلاف خاموشی توڑیں

عوام کا تحفظ ہمارا نصب الدین ، ضلع ایس پی عادل آباد وکرم جیت دگل کا انٹرویو
نرمل /9 اگست ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) تہوار کسی مذہب کا کیوں نہ ہو ایک دوسرے کو مل کر آپس میں خوشیاں باٹنا چاہئے اور ایک دوسرے کے مذاہب کا احترام ہی انسانیت کا نام ہے ۔ انتہاء پسندوں کا کوئی مذہب نہیں ہوتا ۔ بندوق کی گولی سے صرف نفرت پھیلائی جاسکتی ہے محبت نہیں ۔ ان خیالات کا اظہار ضلع ایس پی مسٹر وکرم جیت دُگل نے آج نمائندہ سیاست نرمل کو اپنے چیمبر میں خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے سلسلہ گفتگو جاری رکھتے ہوئے کہا کہ قانون کا آہنی پنجہ کسی بھی مجرم کو کچل سکتا ہے ۔ تاہم عام شہریوں کی ذمہ داری ہے کہ وہ پولیس سے مکمل تعاون کریں ۔آنے والے دنوں میں گنیش اتسو تقاریب ہیں تہوار خوشیاں باٹنے کیلئے ہوتے ہیں ۔ تاہم اکثر یہ دیکھا گیا ہے کہ چند مٹھی بھر شرپسند شہروں کی فضاء کو مکدر کرنا چاہتے ہیں ۔ عوام کو تحفظ فراہم کرنا ہمارا نصب الدین ہے اور ہم اپنے فرائض کو بخوبی انجام دیں گے ۔ عوام یہ بات ذہن نشین کرلیں کہ پولیس آپ کی دوست ہے اور شرپسندوں کی سرکوبی کیلئے ہمیشہ متحرک رہے گی ۔ یقیناً ہو یا دیہات ہوکہ شہر ہو دنیا غلط لوگوں کی وجہ سے نہیں بلکہ اچھے شہریوں کی خاموشی سے خراب ہو رہی ہے ۔ لہذا ہر ذمہ دار شہری کو چاہئے کہ وہ اپنی خاموشی کو توڑتے ہوئے محکمہ پولیس سے تعاون کریں ۔ ضلع ایس پی نے ضلع میں بڑھتے ہوئے جہیز کی لعنت کے واقعات پر گہرے افسوس کا اظہار کیا اور کہا کہ انتہاء پسندی کی جڑوں کو ختم کرنے کیلئے بھی بچھڑے ہوئے طبقات کی ذہن سازی کی جارہی ہے جس کے اچھے نتائج سامنے آرہے ہیں ۔ واضح رہے کہ ضلع ایس پی مسٹر وکرم جیت دُگل قبائلی علاقوں میں مسلسل وقت دیتے ہوئے ان کے ساتھ کھانا بھی کھایا ۔ محکمہ پولیس کے ذمہ دار ہونے کے باوجود عوام کی ضروریات کی تکمیل کیلئے وہ سڑکوں اور اسکولس کی خاطر نمائندگی کر رہے ہیں ۔ ایس پی وکرم جیت دُگل کو اردو زبان پر عبور ہی نہیں بلکہ دینی معلومات کا خزانہ رکھتے ہیں ۔ محکمہ پولیس عوام کے تحفظ اور مجرموں کو پکڑنے کا کام کرتا ہے ۔ لیکن ضلع ایس پی نے امن و امان کی برقراری کے ساتھ ساتھ اس علاقہ کی ترقی اور عوام میں شعور بیداری کیلئے کئی اقدامات کرتے ہوئے غریب عوام کے دلوں میں جگہ بنانی ہے ۔ راقم الحروف نے ان کی کارکردگی کو دیکھتے ہوئے مبارکباد پیش کی اور وکرم جیت دُگل کو انسانیت کی ایک  جیتی جاگتی تصویر قرار دیا ۔ غریب سے غریب بھی راست ان تک پہونچکر اپنی مشکل بیان کرتے ہوئے ان سے انصاف کی امید لگائے بیٹھا ہے ۔ ان کا حسن سلوک ہی ان کی کامیابی کی ضمانت ہے ۔

TOPPOPULARRECENT