Sunday , October 22 2017
Home / Top Stories / شہر اور اضلاع کی 200 مساجد میں حکومت تلنگانہ کی دعوت افطار

شہر اور اضلاع کی 200 مساجد میں حکومت تلنگانہ کی دعوت افطار

چیف منسٹر کے سی آر کی ہدایت پر رمضان پیاکیج پر موثر عمل آوری کے انتظامات، وقف بورڈ میں مسجد کمیٹیوں کا اجلاس
حیدرآباد۔/21جون، ( سیاست نیوز) تلنگانہ حکومت کے رمضان پیاکیج پر موثر عمل آوری کے ذریعہ آج وقف بورڈ کی جانب سے منتخب مساجد کی کمیٹیوں اور متولیوں کے ساتھ اجلاس منعقد کیا گیا۔ ڈائرکٹر جنرل اینٹی کرپشن بیورو عبدالقیوم خاں، سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل، چیف ایکزیکیٹو آفیسر وقف بورڈ محمد اسد اللہ اور اسپیشل آفیسر حج کمیٹی پروفیسر ایس اے شکور نے شرکت کی۔ مساجد کمیٹیوں کو دعوت افطار، طعام اور غریبوں کیلئے کپڑوں کی تقسیم کے سلسلہ میں ضروری ہدایات جاری کی گئیں اور بتایا گیا کہ حقیقی مستحقین تک کپڑے پہنچنے چاہیئے۔ 24جون کو بعد نماز جمعہ کپڑوں کی تقسیم کا آغاز ہوگا اور ابھی تک شہر کی 87 مساجد کو کپڑوں کے پیاکٹس روانہ کردیئے گئے ہیں۔ اجلاس میں بتایا گیا کہ متعلقہ ارکان اسمبلی سے مشاورت کے ذریعہ شہر اور اضلاع میں 200مساجد کا انتخاب کیا گیا ہے جن میں شیعہ اور مہدوی فرقہ کی مساجد کا بھی انتخاب بھی شامل ہے۔ مساجد کمیٹیوں اور متولیوں سے کہا گیا کہ وہ پوری شفافیت کے ساتھ اس اسکیم پر عمل کریں اور وقف بورڈ کے علاوہ پولیس اور جی ایچ ایم سی کے عہدیدار عمل آوری میں تعاون کریں گے۔ اے کے خاں نے کہا کہ 26جون کو چیف منسٹر کی دعوت افطار کے دن تمام مساجد میں دعوت افطار اور طعام کا اہتمام کیا جائے گا۔ اس کے لئے ہر مسجد کو 2 لاکھ روپئے جاری کئے جارہے ہیں۔ 23جون تک مساجد کے اکاؤنٹ میں 2لاکھ روپئے جمع کردیئے جائیں گے جن مساجد کے اکاؤنٹ نہیں پولیس کی اعانت سے اکاؤنٹ کھولے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہر مسجد میں 1000 افراد کیلئے کھانے کا انتظام کیا جائے گا اور اس کے لئے مینو طئے کیا گیا ہے۔ اگر مسجد چھوٹی ہو تو قریبی میدان یا پھر فنکشن ہال میں طعام کا انتظام کیا جائے۔ انہوں نے بتایا کہ غریبوں کیلئے کپڑوں کے پیاکیج میں مرد افراد کیلئے کرتا پاجامہ اور خواتین کیلئے ایک ساڑی اور سوٹ رکھا گیا ہے۔ اس طرح 2لاکھ پیاکٹس کے تحت 6 لاکھ افراد کو کپڑے دستیاب ہوں گے۔ انہوں نے مساجد کمیٹیوں سے خواہش کی کہ وہ دعوت افطار اور کپڑوں کی تقسیم میں غریب اور مستحق افراد کو ترجیح دیں کیونکہ حکومت کا مقصد غریب اور مستحق خاندانوں کو عید کی خوشی میں شامل کرنا ہے۔ چیف ایکزیکیٹو آفیسر محمد اسد اللہ نے مساجد کمیٹیوں کو پیاکیجس کی تفصیلات سے واقف کرایا اور کہا کہ شہر اور اضلاع میں کپڑوں کی مساجد کمیٹیوں کو روانگی کا آغاز ہوچکا ہے۔ اضلاع میں ضلع کلکٹرس کے ذریعہ مساجد کو 2 لاکھ روپئے جاری کئے جائیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ اس اسکیم پر عمل آوری کیلئے وقف بورڈ کے عہدیداروں کی خدمات حاصل کی گئی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ نظام آباد میں کل22 جون کو ائمہ اور موذنین کے اعزازیہ کی تقسیم عمل میں آئے گی۔

TOPPOPULARRECENT