Monday , May 29 2017
Home / Top Stories / شہر میں تیز ہواؤں کے ساتھ بارش ‘ ژالہ باری ‘ درخت و برقی تار گرگئے

شہر میں تیز ہواؤں کے ساتھ بارش ‘ ژالہ باری ‘ درخت و برقی تار گرگئے

100 کیلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے ہوائیں ۔ ژالہ باری سے مکانات کے شیشے ٹوٹ گئے ۔ تقریبا شہر میں برقی سربراہی منقطع ۔ این ڈی آر ایف ٹیمیں متعین

حیدرآباد۔9مئی(سیاست نیوز) شہر میں تیز ہواؤں ‘ ژالہ باری اور بارش کے سبب اندرون دو گھنٹے شہر میں کئی مقامات پر برقی تاروں کے گرنے کے علاوہ درختوں کے گرنے اور حادثات کی شکایات موصول ہوئیں۔ رات اچانک شروع ہوئی بارش کے ساتھ ہی سڑکوں پر پانی جمع ہونے کے علاوہ برقی سربراہی منقطع ہونے کی شکایات موصول ہونے لگی۔ دونوں شہروں کے مختلف علاقوں بالخصوص کاپرا‘ قطب اللہ پور‘ شمس آباد‘ کے علاوہ شہر کے مرکزی علاقو ںمیں شدید بارش اور ژالہ باری کے سبب کاروں اور گھروں کے شیشے ٹوٹنے کی شکایات بھی موصول ہونے لگیں۔ بارش کی رفتار تیز ہوتے ہی ایمرجنسی خدمات کو متحرک کردیا گیا کیونکہ بارش کے سبب مشکلات میں پھنسے افراد کی آن لائن شکایات کی بھرمار شروع ہو چکی تھی ۔بارش کے آغاز کے اندرون آدھا گھنٹہ ہی شہر کے مختلف مقامات جوبلی ہلز ‘ بنجارہ ہلز‘ پنجہ گٹہ ‘ سوماجی گوڑہ اور خیریت آباد سے سڑکوں پر پانی جمع ہونے کے علاوہ راستے مسدود ہوجانے کی شکایات موصول ہوئیں ۔ کے بی آر پارک کے روبرو دو درختوں کے ساتھ برقی تاروں کے گرنے کی شکایات موصول ہوئیں۔ رات دیر گئے موصولہ اطلاعات کے بموجب شہر میں کئی مقامات پر قومی ڈیزاسٹر مینجمنٹ فورس کی ٹیموں کو متعین کردیا گیا ہے ۔ رات 11بجے اچانک شہر میں گرج اور چمک کے ساتھ بارش کے آغاز اور تیز ہواؤں کے سبب آندھی جیسی صورتحال شہر کی سڑکوں پر دیکھی جانے لگی تھی۔ بیوسف گوڑہ اور نارسنگی سے بھی درختوں کے گرنے کی شکایات وصول ہوئیں ۔ جوبلی ہلز میں واقع عمارت کے سیلر میں برقی تاروں کو آگ لگ جانے پر فوری محکمہ فائر بریگیڈ کو روانہ کیا گیا اور فائر بریگیڈ عملہ نے عمارت کے سیلر میں لگی برقی تاروں کو آگ پر قابو پالیا۔ بیگم پیٹ ‘ اپل‘ یوسف گوڑہ‘ بلکم پیٹ‘ آر بی آئی کوارٹرس‘ سری نگر کالونی کے میں بھی بھاری بارش ریکارڈ کی گئی اور بارش کی رفتار اور شکایات کے آغاز کے ساتھ ہی ڈپٹی مئیر مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد جناب بابا فصیح الدین نے یوسف گوڑہ اور بنجارہ ہلز کے علاوہ بلکم پیٹ و دیگر علاقوں میں جہاں بارش کا پانی جمع ہونے کی شکایات موصول ہوئی تھی ان علاقو ںکا معائنہ کرتیہوئے عہدیداروں کو ہدایات جاری کی۔ پرانے شہر کے علاقوں میں چارمینار‘ شاہ علی بنڈہ‘ یاقوت پورہ‘ چندرائن گٹہ‘ کالا پتھر‘ تاڑبن‘ انجن باؤلی‘ کے علاوہ دیگر علاقوں میں بھی گرج اور چمک کے ساتھ بارش کا سلسلہ مسلسل ایک گھنٹہ تک جاری رہا لیکن کسی بھی علاقہ میں درختوں کے گرنے کی شکایات وصول نہیں ہوئی بلکہ بعض مقامات پر برقی تاروں کے گرنے کی شکایت موصول ہوئی جس کے سبب شہر کا بیشتر حصہ تاریکی میں ڈوب گیا۔ محکمہ موسمیات کے مطابق 9مئی کی شب ہوئی بارش کے دوران 100کیلو میٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے ہوائیں ریکارڈ کی گئیں جس کے سبب درخت گر پڑے اور کئی مقامات پر برقی تار و برقی کھمبے بھی گر پڑنے کی شکایات ایمرجنسی عملہ کو موصول ہوئی۔ بنجارہ ہلز‘ ہائی ٹیک سٹی اور نامپلی کے علاقو ںمیں نصب بڑے ہورڈنگس کو بھاری نقصان ہوا ۔ جیا گوڑہ سب اسٹیشن میں بارش کے سبب آئی خرابی کے سبب کاروان ‘ سبزی منڈی‘ گڈی ملکا پورکے علاقہ تاریکی میں ڈوب گئے اور رات دیر گئے تک بھی ان علاقوں میں برقی سربراہی بحال نہیں ہو سکی۔ بلکم پیٹ میں مین ہول میں کار کے پھنس جانے سے مسافرین چیخ و پکار کرنے لگے جن کی مدد کیلئے فوری مقامی افراد نے ایمرجنسی عملہ کی خدمات طلب کی ۔ کمشنر جی ایچ ایم سی ڈاکٹر بی جناردھن ریڈی نے رات دیر گئے بتایا کہ بلدی حدود میں ہوئی شدید بارش اور تیز ہواؤں سے ہوئی تباہ کاریوں سے نمٹنے اور ہنگامی خدمات کی فراہمی کیلئیاین ڈی آر ایف کی خدمات حاصل کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے تعیناتی شروع کردی گئی ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT