Monday , June 26 2017
Home / شہر کی خبریں / شہر میں قبر کیلئے 3 لاکھ روپئے لئے جانے کا حکومت کو علم

شہر میں قبر کیلئے 3 لاکھ روپئے لئے جانے کا حکومت کو علم

اضلاع میں قبرستانوںاور شمشان کیلئے سرکاری اراضیات کا عنقریب الاٹمنٹ :ڈپٹی چیف منسٹر
حیدرآباد۔16مارچ (سیاست نیوز) حکومت تلنگانہ انتخابی وعدہ کے مطابق بہت جلد ریاست کے تمام اضلاع میں قبرستانوں اور شمشان کے لئے اراضیات کی تخصیص عمل میں لائے گی۔ ڈپٹی چیف منسٹر جناب محمد محمود علی نے تلنگانہ قانون ساز کونسل میں وقفہ سوالات کے دوران یہ بات کہی۔ رکن قانون ساز کونسل مسٹر بھوپال ریڈی کے سوال پر جاری مباحث کے دوران قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل جناب محمد علی شبیر‘ جناب الحاج محمد سلیم اور جناب محمد فاروق حسین ارکان قانون ساز کونسل نے مباحث میں حصہ لیا۔ جناب محمد علی شبیر نے مباحث کے دوران حکومت سے استفسار کیا کہ حکومت نے انتخابات سے قبل عوام سے قبرستانوں کے لئے اراضی کی تخصیص کا وعدہ کیا تھا لیکن اس وعدہ پر عمل آوری نہیں ہوئی ۔ انہوں نے تجاویز پیش کرتے ہوئے کہا حکومت کو فوری اراضیات کی نشاندہی کرتے ہوئے سرکاری اراضیات کی تخصیص عمل میں لانی چاہئے اور اگر شہر کے مضافات میں سرکاری اراضیات موجود نہیں ہیں تو ایسی صورت میں قانون حصول حق اراضی کا استعمال کرتے ہوئے خانگی اراضیات حاصل کرنی چاہئے ۔جناب محمد محمود علی نے قائد اپوزیشن کی توجہ دہانی پر کہا کہ حکومت بہت جلد اس سلسلہ میں کاروائی کرے گی اور سب سے پہلے شہر حیدرآباد کے مضافاتی علاقہ پہاڑی شریف کے قریب قبرستان کیلئے جگہ مختص کی جائے گی اور اس قبرستان سے متصل مسجد کی تعمیر عمل میں لائی جائے گی علاوہ ازیں غریب مرحومین کی تجہیز و تکفین کے لئے نعش کو منتقل کرنے کیلئے گاڑی کا بھی انتظام کیا جائے گا۔ جناب محمد فاروق حسین نے قبرستانوں میں قبور کیلئے ایک لاکھ روپئے تک وصول کئے جانے کی بات کہی اور کہا کہ حکومت اس مسئلہ کا سخت نوٹ لے جس پر جناب محمد محمود علی نے اعتراف کیا اور کہا کہ ایک لاکھ نہیں بعض مقامات سے 3لاکھ روپئے تک وصول کئے جانے کی اطلاعات موصول ہو ئی ہیں اور ان شکایات کا جائزہ لیتے ہوئے کاروائی کے متعلق غور کیا جا رہا ہے۔ جناب محمد فاروق حسین نے شہری آبادیوں سے شمشان گھاٹ کو مضافات میں منتقل کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ شہری اس بات کی شکایات کر رہے ہیں کہ نعش نذرآتش کرنے کے سبب اطراف کے علاقوں میں موجود مکانات میں تعفن پھیل رہا ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT