Monday , May 29 2017
Home / شہر کی خبریں / شہر میں مختلف مقامات سے ریالیوں کا پرامن انعقاد

شہر میں مختلف مقامات سے ریالیوں کا پرامن انعقاد

بجرنگ دل کی مسلمانوں کیخلاف زہر افشانی، ڈی سی پی ساؤتھ زون نے ڈی جے سسٹم ضبط کرلیا
حیدرآباد /11 اپریل ( سیاست نیوز ) ہنومان جینتی وجئے یاترا کے دوران بجرنگ دل کارکنوں نے شرانگیزی کی پھر ایک مرتبہ کوشش کی جس کے نتیجہ میں پولیس نے دو علحدہ مقدمات درج کرلئے ۔ گولی گوڑہ رام مندر کے قریب آج صبح اس وقت کشیدگی پیدا ہوگئی جب بجرنگ دل کے ریاستی صدر بھانو پرکاش اور اس کے ساتھیوں نے ہنومان جینتی ریالی کے دوران ڈی جے سسٹم کے استعمال کی کوشش کی جسے پولیس نے ناکام بنادیا ۔ بجرنگ دل کارکنوں نے پولیس کی اس کارروائی کے خلاف نعرے بازی کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر پولیس ساؤتھ زون مسٹر وی ستیہ نارائنا جو ایسٹ زون کے بھی انچارج ہیں کو ڈی جے سسٹم ضبط کرنے سے روکنے کی کوشش کی ۔ بندوبست میں موجود پولیس عہدیداروں نے ڈی جے سسٹم کو ضبط کرکے افضل گنج پولیس اسٹیشن منتقل کیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ پولیس نے صدر بجرنگ دل بھانو پرکاش اور اس کے ساتھیوں کے خلاف تعزیرات ہند کے دفعات 186 ، 188 ، 290 ، 341 اور 504 کے تحت ایک مقدمہ درج کرتے ہوئے تحقیقات کا آغاز کردیا ۔واضح رہے کہ پولیس کمشنر حیدرآباد مسٹر مہیندر ریڈی نے 4 اپریل کو ایک اعلامیہ جاری کرتے ہوئے دونوں شہروں میں عوامی مقامات یا جلسے و جلوس کے دوران ڈی جے کے استعمال پر پابندی عائد کردی تھی ۔ ہنومان جینتی ریالی کا آغاز آدھا گھنٹہ تاخیر سے ہوا اور ریالی آندھرا بینک کوٹھی کے روبرو واقع استقبالیہ اسٹیج کے قریب پہونچنے پر بجرنگ دل کے میڈیا انچارج ویریشم نے زہر افشانی کرتے ہوئے ڈی سی پی ساؤتھ زون پر الزام عائد کیا کہ وہ اقلیتی طبقہ کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کرتے حالانکہ مساجد سے لاؤڈ اسپیکر کے ذریعہ 5 مرتبہ اذان دی جاتی ہے ۔ ویریشم نے ڈی سی پی کے خلاف نازیبا الفاظ کا بھی استعمال کیا ۔ پولیس سلطان بازار نے بجرنگ دل میڈیا انچارج کے خلاف اشتعال انگیزی کرنے اور دیگر دفعات کے تحت ایک مقدمہ درج کرتے ہوئے تحقیقات کا آغاز کردیا ۔کمشنر پولیس حیدرآباد مسٹر مہیندر ریڈی نے سٹی کمانڈ کنٹرول سنٹر سے ہنومان جینتی کی ریالی کی راست نگرانی کی ۔ ہنومان جینتی ریالی پرامن طور پر تاڑبن سکندرآباد پر اختتام کو پہونچی ۔ اسی طرح آج شام 5 بجے جشن ولادت حضرت علیؓ کے موقع پر پرانے شہر سے 10 مختلف ریالیاں نکالی گئی جو شہر کے مختلف علاقوں میں ہوتے ہوئے کوہ مولا علی پر اختتام کو پہونچی ۔ یہاں پر پولیس کمشنر رچہ کنڈہ مسٹر مہیش بھاگوت نے انتظامات کا جائزہ لیا اور مولا علی میں حاضری دی ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT