Monday , August 21 2017
Home / شہر کی خبریں / شہر میں کتوں کی بہتات پر قابو پانے مجلس بلدیہ کے بڑے پیمانے پر اقدامات

شہر میں کتوں کی بہتات پر قابو پانے مجلس بلدیہ کے بڑے پیمانے پر اقدامات

نس بندی آپریشن اور زہر زائل کرنے والے ٹیکے دینے پر خاص توجہ ۔ کمشنر بلدیہ جناردھن ریڈی کا بیان
حیدرآباد ۔ 23 ۔ فروری : ( سیاست نیوز ) : گریٹر حیدرآباد میں آوارہ کتوں کی بہتات پر قابو پانے کے بڑے پیمانے پر اقدامات کئے جارہے ہیں ۔ دن بہ دن بڑھتی کتوں کی کثرت پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے بلدیہ نے کتوں کی نس بندی کا فیصلہ کیا ہے ۔ بلدیہ کے اس خصوصی پروگرام میں بلدیہ دیگر سرکاری محکموں جیسے انیمل ہسبنڈری ڈپارٹمنٹ سے تعاون حاصل کرے گا ۔ یہ بات کمشنر بلدیہ مسٹر ڈاکٹر بی جناردھن ریڈی نے بتائی ۔ انہوں نے بتایا کہ آئندہ 6 ماہ میں شہر کے 70فیصد کتوں کے آپریشن کئے جائیں گے اور کتوں کا صد فیصد آبادی کا ویکسینیشن کیا جائے گا ۔ انہوں نے بتایا کہ اندازے کے مطابق شہر میں کتوں کی تعداد 6 لاکھ پائی جاتی ہے اور ان کی بہتات پر قابو پانے آپریشن ضروری ہیں ۔ کمشنر بلدیہ نے بتایا کہ آگہی اور شعور بیداری کے علاوہ موجود 5 ریجنل کیر سنٹرز کی تعداد میں اضافہ کیا جائیگا اور مزید 4 سنٹرس قائم کئے جائیں گے ۔کمشنر بلدیہ نے بتایا کہ جی ایچ ایم سی کے ڈاکٹروں کی مدد سے آپریشن جاری ہے تاکہ کتوں کی کثرت پر قابو پایا جاسکے ۔ تاہم مزید اقدامات کئے جارہے ہیں ۔ بلدیہ کے حدود میں 11 سرکاری ویٹرنری ڈاکٹرس ، 24 پرائیوٹ ڈاکٹرس کے بشمول102  افراد ایسے ہیں جن کے ذریعہ کتوں کو پکڑنے کی خدمات حاصل کی جاتی ہیں ۔ کمشنر بلدیہ نے بتایا کہ ہر دن شہر میں 350 کتوں کے نس بندی آپریشن کئے جاتے ہیں اور آئندہ 6 ماہ میں 2.8 لاکھ کتوں کے آپریشن کئے جائیں گے ۔ اس سلسلہ میں انیمل ہسبنڈری محکمہ کی جانب سے منصوبہ تیار کیا جارہا ہے ۔اس کے ساتھ ساتھ کتوں میں زہر کو زائل کرنے والے ٹیکے دئیے جارہے ہیں ۔ فی الحال جی ایچ ایم سی کی قیادت میں آپریشن کے لیے فی کتا 40 روپئے ویٹرنری ڈاکٹر کو دئیے جارہے ہیں ۔ 25 پرائیوٹ ڈاکٹرس کے علاوہ خانگی وٹرنری دواخانوں میں بھی آپریشن کئے جارہے ہیں ۔ اس موقع پر ڈائرکٹر انیمل ہسبنڈری مسٹر وینکٹیشورلو نے بتایا کہ شہر میں کتوں کے آپریشن کے لیے خصوصی اقدامات کئے جارہے ہیں ۔ اور اس کے لیے 20 ڈاکٹروں کو دوسرے اضلاع سے ڈیپوٹیشن پر طلب کیا جارہا ہے اور وسیع پیمانے پر اقدامات کئے جارہے ہیں ۔ کتے کی عمر 8 تا 11 سال ہوتی ہے اور ہر 8 ماہ میں کتا 4 تا 6 کتوں کو جنم دیتا ہے جس کے سبب کتوں کی تعداد میں بے پناہ اضافہ ہوا ہے ۔ اور شہر میں آوارہ کتوں کو ہلاک کرنے کے بجائے انہیں پکڑ کر آبادی میں اضافہ ہونے سے روکنے کے ہی اقدامات کئے جارہے ہیں ۔ جب کہ شہر میں موجودہ کتوں کی تعداد میں 5 لاکھ سے زائد آوارہ کتے ہیں اور ان آوارہ کتوں میں ہی آبادی کا تناسب زیادہ ہے ۔ سال 2014-15 میں 90 ہزار اور 2015-16 میں تاحال 61 ہزار آوارہ کتوں کے آپریشن کئے گئے ہیں ۔ شہر میں 17 گاڑیوں اور 102 افراد پر مشتمل عملہ کی جانب سے عوامی شکایت پر اقدامات کئے جاتے ہیں اور گذشتہ دو سال کے دوران شہر میں ریبیز سے کوئی اموات نہیں ہوئی ہے ۔ اس خصوص میں کمشنر بلدیہ نے عنبر پیٹ میں واقعہ آوارہ کتوں کے مرکز کا معائنہ کیا ۔

TOPPOPULARRECENT