Saturday , May 27 2017
Home / شہر کی خبریں / شہر کو لاریوں اور ٹپروں سے محفوظ بنانے کی ضرورت،آئے دن حادثات میں اضافہ ، رات کے وقت جوکھم بھرا سفر

شہر کو لاریوں اور ٹپروں سے محفوظ بنانے کی ضرورت،آئے دن حادثات میں اضافہ ، رات کے وقت جوکھم بھرا سفر

حیدرآباد۔14اپریل (سیاست نیوز) شہر کی سڑکوں کو محفوظ بنانے کیلئے یہ ضروری ہے کہ شہر ی سڑکوں کو لاریوں اور ٹپر سے پاک بنایا جائے کیونکہ شہری علاقو ںمیں پیش آنے والے اکثر حادثات کا شکار ٹو وہیلر ہوتے ہیں اور وہ لاری یا ٹپر سے ٹکراتے ہیں جس کے سبب حالیہ عرصہ میں کئی جانیں ضائع ہوئی ہیں ۔ حیدرآباد اور سکندرآباد کی سڑکو ںپر بھاری سامان سے لدی لاریوں پر مکمل امتناع ہے لیکن رات کے اوقات میں یہ لاریاں شہر میں داخل ہو رہی ہیں اور ان لاریوں کے سبب حادثات رونما ہونے لگے ہے۔ ان لاریوں کو شہر میں داخل ہونے کس طرح دیا جا رہا ہے ہے اس بات سے سب واقف ہیں لیکن جو ان سامان سے لدی لاریوں کو شہر میں داخل ہونے دیتے ہیں انہیں شہریوں کی زندگیوں کی کوئی پرواہ نہیں ہوتی۔ تلگو دیشم دور اقتدار میں حیدرآباد میں لاریوں کے داخلہ کو بند کرنے کے لئے شہر میں موجود تمام آٹو نگر کو شہر کے باہر منتقل کردیا گیا تھا لیکن اب دوربار ہ شہر کے کئی علاقہ آٹو نگر میں تبدیل ہو چکے ہیں اور شہر کی اہم سڑکوں پر لاریاں آزادی کے ساتھ گھوم رہی ہیں جنہیں شہر میں داخل ہونے روکنے کے بعد ہی حادثات کو مکمل طور پر روکا جا سکتا ہے۔جاریہ سال کے لاری اور ٹپر کی ٹکر کے سبب 8افراد اپنی جان گنوا بیٹھے ہیں لیکن اس کے باوجود اب تک بھی شہر میں لاریوں اور ٹپر کے داخلہ پر پابندی عائد کرنے کے اقدامات کو تیز نہیں کیا گیا جو کہ شہریوں کی زندگیوں کو جوکھم میں ڈالنے کے مترادف ہے۔ جاریہ سال کے ابتدائی ایام میں 28جنوری کو سکندرآباد ‘ تاڑبن روڈ پر پیش آئے خوفناک حادثہ میں 2نوجوان ہلاک ہوگئے جبکہ ایک طالب علم شدید زخمی ہوا تھا اس کے بعد گذشتہ ماہ کے اواخر میں مسلم جنگ کا پل کے قریب رات دیر گئے لاری نے دو نوجوانوں کو روند دیا جس کے سبب برسر موقع ان کی موت واقع ہو گئی اور گذشتہ شب ترملگیری میں ٹپر کے حادثہ نے ایک ہی خاندان کے 4افراد کی جان لے لی۔شہر کی سڑکوں پر جو حادثات رونما ہوتے ہیں ان میں جان لیوا حادثات کی وجہ اکثر ٹپر اور لاریاں ہی ہوتی ہیں کیونکہ ان ٹپر اور لاریوں کے ڈرائیورس کو شاہراہوں پر گاڑیاں دوڑانے کی عادت ہوتی ہے اور وہ شہر میں رات کے اوقات میں اسی طرح بے ہنگم گاڑیاں دوڑانے لگ جاتے ہیں جس کے نتیجہ میں اس طرح کے واقعات رونما ہو رہے ہیں ۔ان حادثات کے تدارک کیلئے ضروری ہے کہ لاریوں کے لئے شہر کے اطراف بنائی گئی رنگ روڈ کے استعمال کیلئے لاریوں کو پابند بنایا جائے تاکہ شہر کی سڑکیں محفوظ رہ سکیں۔سامان سے لدی لاریوں اور ٹپر وغیرہ کو شہر میں داخل ہونے سے روکنے کے کئی فائدے ہیں جن میں حادثات سے تدارک کے علاوہ شہر کی سڑکوں کی حفاظت بھی شامل ہے۔شہر کی سڑکیں جو جلد خراب ہو رہی ہیںاور ان میں گڑھے پڑنے لگے ہیں اس کیلئے بھی بھاری سامان سے لدی لاریاں ذمہ دار ہیں جو شاہراہوں پر ہی چلنی چاہئے لیکن شہر میں پہنچنے لگی ہیں۔تلگو دیشم دور حکومت میں جس طرح سختی کے ساتھ لاریوں کو شہر میں داخل ہونے پر پابندی عائد کی گئی تھی اسی طرح سختی کے ساتھ پابندی عائد کئے جانے کی صورت میں شہر حیدرآباد کی سڑکوں کو حادثات سے پاک بنایا جا سکتا ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT