Saturday , March 25 2017
Home / شہر کی خبریں / شیخ خالد سیف اللہ ایڈوکیٹ کی گرفتاری ڈی جے ایس کی مذمت

شیخ خالد سیف اللہ ایڈوکیٹ کی گرفتاری ڈی جے ایس کی مذمت

حیدرآباد ۔ 22 ۔ فروری : ( راست ) : درس گاہ جہاد و شہادت کے پریس نوٹ کے بموجب 18 فروری کو سیف اللہ خالد ایڈوکیٹ کو عثمانیہ یونیورسٹی کے جعلی سرٹیفیکٹ کے مقدمہ میں ایک سازش کے تحت فرضی مقدمہ میں گرفتار کیا گیا ۔ پولیس کی جانب سے دائر کردہ فرضی مقدمہ کی پیروی کے لیے وکلاء کی کثیر تعداد نے مجسٹریٹ کے روبرو اس فرضی مقدمہ کی نمائندگی کی ۔ ان پر 2004 میں سعید آباد پولیس کی جانب سے ایک مقدمہ درج کیا گیا تھا ، مغل پورہ پولیس نے بھی پولیس والوں پر حملہ کا مقدمہ 2009 میں درج کیا تھا ۔ پولیس نے انتقامی کارروائی کے طور پر ایک فرضی کہانی گھڑ کر خالد سیف اللہ کو بدنام کرنے کی کوشش کی جس کی امیر درس گاہ محمد عبدالماجد سکریٹری صلاح الدین عفان آرگنائزنگ سکریٹری محمد بن عمر عبدالمنان عمری شاہ نواز خاں معین شریف نے اس گرفتاری کی مذمت کی ۔۔
راجندر نگر واقعہ کی تحقیقات کا اعلان
ڈپٹی مئیربابا فصیح الدین
حیدرآباد /22 فروری ( سیاست نیوز ) راجندرنگر سانحہ پر اپنے گہرے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے ڈپٹی مئیر بابا فصیح الدین نے کہا کہ اس سانحہ کے خلاف تحقیقات کی جائے گی ۔ انہوں نے 6 افراد کی ہلاکت پر افسوس کا اظہار کیا اور کہا کہ گذشتہ 3 سال سے اس علاقہ میں گودام موجود ہے اور تاحال بلدی حکام نے اس کے خلاف کارروائی نہیں کی ۔ اس گودام کے قیام کیلئے بلدی حکام سے کسی بھی قسم کی اجازت حاصل نہیں لی گئی تھی اور مشتبہ طور پر بلدی حکام کا رول بھی پایا جاتا ہے ۔ ڈپٹی مئیر نے تحقیقات کے بعد بلدی عہدیداروں کے خلاف کارروائی کا انتباہ دیا ڈپٹی مئیر مقامی رکن اسمبلی پرکاش گوڑ کے ہمراہ حادثہ کے مقام پہونچے تھے ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT