Sunday , September 24 2017
Home / Top Stories / شیخ زاید مسجد کی خوبصورتی اور فن تعمیر متاثر کُن: مودی

شیخ زاید مسجد کی خوبصورتی اور فن تعمیر متاثر کُن: مودی

انسانی کامیابی اور اتحاد کی بہترین مثال ، ابوظہبی میں وزیراعظم کا ولیعہد نے پروٹوکول نظر انداز کرتے ہوئے خیرمقدم کیا

ابوظہبی ۔ /16 اگست (سیاست ڈاٹ کام) متحدہ عرب امارات قیادت کے ساتھ دہشت گردی اور سرمایہ کاری پر بات چیت کا ایجنڈہ لئے وزیراعظم نریندر مودی نے اپنے دو روزہ دورہ کا آج آغاز کیا ۔ انہوں نے یو اے ای کی تاریخی شیخ زاید مسجد کا بھی دورہ کیا جو دنیا کی تیسری بڑی مسجد ہے ۔ انہوں نے 180,000 مربع فٹ رقبہ پر محیط اس عظیم الشان فن شاہکار مسجد کا مشاہدہ کیا۔ اس مسجد میں نقش و نگار کا انتہائی عمدہ نمونہ پیش کیا گیا ہے اور اسے دنیا بھر میں ماربل موسائیک (عمدہ اور چمکدار پتھر) کی سب سے شاندار مثال تصور کیا جاتا ہے ۔ وزیراعظم نریندر مودی کریم کلر کا کرتا پہنے اور گلے میں سفید  و زعفرانی کھنڈوا ڈالے ہوئے تھے ۔ انہوں نے انتہائی دلچسپی کے ساتھ یہاں کے نقش و نگار اور فن تعمیر کا مشاہدہ کیا ۔ شیخ زاید مسجد کی تعمیر پر تقریباً 545 ملین ڈالرس کی لاگت آئی اور اس مسجد کے جملہ 82 گنبد ہیں جو سات علحدہ سائز میں ہے ۔ نریندر مودی نے وزیٹرس بک میں لکھا کہ ’’اس غیرمعمولی عبادت گاہ کے مقام کا دورہ کرتے ہوئے وہ خوشی محسوس کررہے ہیں اور اس کے رقبہ اور خوبصورتی سے وہ کافی متاثر ہوئے ۔

دنیا بھر کے ماہرین نے مل کر  انسانی ترقی اور اتحاد کی ایک بہترین مثال قائم کی ہے ۔ انہیں یقین ہے کہ یہ امن ، خوشحالی ، ہم آہنگی اور اجتماعیت کی ایک علامت ہوگی جو عقیدہ اسلام کا ورثہ ہے ‘‘۔ وزیراعظم نریندر مودی کا قبل ازیں ولی عہد ابوظہبی شیخ محمد بن زاید آل نھیان نے اپنے پانچ بھائیوں کے ہمراہ ایرپورٹ پر گرمجوشانہ استقبال کیا ۔ وہ پروٹوکول کو نظرانداز کرتے ہوئے ایرپورٹ پر استقبال کیلئے موجود تھے ۔

اس سے پہلے گزشتہ سال مئی میں مراقش کے شاہ کا بھی اسی طرح پروٹوکول سے ہٹ کر استقبال کیا گیا تھا ۔ وزیراعظم نے کل یو اے ای قیادت سے ہونے والی بات چیت کے ایجنڈہ کا واضح طور پر اشارہ دے دیا ہے ۔ انہوں نے خلیج ٹائمز کو دیئے گئے انٹرویو (خبر صفحہ 4 پر)میں کہا کہ وہ ہندوستان کو تجارت اور دہشت گردی کے خلاف لڑائی میں یو اے ای کا پارٹنر بنانا چاہتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے مشترکہ سکیورٹی مسائل ہیں اور علاقہ میں وہ سکیورٹی کے ساتھ ساتھ انتہا پسندی جیسے مسائل کا سامنا کررہے ہیں ۔ مودی نے کہا کہ خلیجی خطہ ہندوستان کی معاشی ، توانائی اور سکیورٹی مفادات کیلئے اہمیت کا حامل ہیں ۔ نریندر مودی نے یہاں پہونچتے ہی ٹوئٹر پر لکھا ’’ ہیلو یو اے ای ۔ میں اس دورہ کے بارے میں کافی پرامید ہوں ۔ مجھے یقین ہے کہ یہ دورہ ہند ۔ یو اے ای تعلقات کو مستحکم کرے گا ‘‘ ۔ انہوں نے عربی میں بھی یہ پیام ٹوئٹ کیا ۔ مودی نے کہا کہ وہ ہز ہائینس شیخ محمد بن زاید آل نھیان کے جذبہ خیرسگالی کی ستائش کرتے ہیں جنہوں نے ایرپورٹ پہونچ کر میرا استقبال کیا ۔ ایرپورٹ پر وزیراعظم کو گارڈ آف آنر بھی پیش کیا گیا ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT